سابق آئی پی ایس پراوین کمار کے خلاف مقدمہ درج کرنے کریم نگر کی عدالت کی ہدایت

کریم نگر _ کریم نگر پرنسپل منصف  جوڈیشل فرسٹ کلاس مجسٹریٹ سائی سدھا نے چہارشنبہ کے روز تھری ٹاون  پولیس اسٹیشن کے ایس ایچ او کو سابق آئی پی ایس آفیسر آر ایس پروین کمار کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی ہدایت دی ہے ۔بتایا جاتا ہے کہ چند سال قبل پروین کمار اور ایک ٹیچر   شنکر نے پداپلی ضلع کے جولاپلی منڈل کے گاؤں وڈوکاپور  کے ایک ویلفیئر اسکول کے پروگرام میں حصہ لیا۔ اس موقع پر ان دونوں نے اسکول کے بچوں کو عہد دلایا کہ وہ ہندو دیوتاؤں کی پوجا نہیں کریں گے۔ یہ معاملہ سوشل میڈیا پر وائرل ہوگیا تھا ۔ 16 مارچ 2021 کو کریم نگر کے ایک شخص مہندر ریڈی نے  مقامی پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کروائی کہ یہ حرکت ہندو عقائد کے خلاف ہے۔ 18 مارچ کو عدم کارروائی پر کریم نگر پولیس کمشنر کے پاس شکایت درج کی گئی تھی۔ اس کے باوجود کارروائی نہ کرنے پر انہوں نے ایک درخواست 22 مارچ کو ایڈووکیٹ  گنگا دھر کے ذریعہ پرنسپل منصف جوڈیشل مجسٹریٹ عدالت میں دائر کی تھی۔ کیس کے شواہد اور پس منظر کی جانچ پڑتال کے بعد معزز جج سائی سدھا نے پروین کمار اور ٹیچر  شنکر کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی ہدایت دی ۔واضح رہے کہ تین دن قبل ہی پراوین کمار کے وی آر ایس کی درخواست کو حکومت نے منظوری دی۔ان پر اسکولوں میں عیسائی مذہب کی تبلیغ کا الزام عائد کیا گیا تھا