بھینسہ میں فسادات میں ملوث 8 ،ملزمین کے خلاف پی ڈی ایکٹ

نرمل _ تلنگانہ کی نرمل ضلع  پولیس نے بھینسہ ٹاون میں فرقہ وارانہ فسادات میں ملوث رہنے والے 8 ملزمین کے خلاف پی ڈی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرتے ہوئے انھیں جیل بھیج دیا ہے  ضلع ایس پی سی ایچ پروین کمار نے بتایا کہ بھینسہ ٹاون  میں پرامن ماحول پیدا کرنے کے لئے مستقل حل کی  حکومت اقدامات کررہی ہے
اس سلسلے میں دونوں طبقات سے تعلق رکھنے والے آٹھ افراد کے خلاف “پی ڈی ایکٹ” درج کیا گیا ہے جو بھینسہ شہر میں فرقہ وارانہ فسادات میں ملوث تھے اور ان کے خلاف سخت کارروائی کی گئی ہے۔ حال ہی میں بھینسہ  میں دونوں طبقات کے آٹھ افراد نے مذہبی منافرت کو بھڑکانے ، جھڑپیں کرنے ، تخریب کاری کرنے اور ایک دوسرے کو جان لیوا ہتھیاروں سے قتل کرنے کے معاملات میں ملوث تھے ایس پی نے بتایا کہ دونوں فرقوں کو اشتعال دلانے اور مسلسل ہنگامہ آرائی کرکے  امن کو خراب کرنے کے 8 اہم ملزموں پر پی ڈی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرکے جیل بھیج دیا گیا ہے۔
1)  عبد القدیر (42 سال) موجودہ 21 ویں وارڈ کونسلر ، 10 مقدمات
2) ساجد خان (26 سال) 10 مقدمات
3) *عبدل زبیر (22 سال) 06 مقدمات
4)  شیخ سلمان (21 سال) 11 مقدمات
5)   وجے کمار (42 سال)  8 ویں وارڈ کونسلر ، 15 مقدمات
6) این  لنگوجی ، (28 سال) 14 مقدمات
7) تلوجی راکیش ، (26 سال) 14 مقدمات
8)آر کرانتی   (20 سال) 8 معاملات میں