حیدرآباد میں ایک چالان رہنے پر وکیل کی گاڑی ضبط

حیدرآباد _ حیدرآباد کی مادھا پور ٹریفک پولیس نے  ایک دو پہیہ والی گاڑی کو پکڑ کر ضبط کردیا جس پر صرف ایک چالان تھا ۔ بتایا جاتا ہے کہ نکھلیش توگری ، جو کوکٹ پلی کورٹ کے وکیل  ہیں، کو اتوار کو ٹریفک پولیس نے پروات نگر چوراہے پر روک لیا۔ ایس آئی مہیندر ناتھ نے بتایا کہ موٹر سائیکل پر 1650 روپے چالان زیر التوا ہیں سب انسپکٹر نے چالان کی ادائیگی کا مطالبہ کیا۔جس پر وکیل نے جواب دیا کہ ان کی گاڑی پر صرف ایک ہی وہ بھی جھوٹا چالان ہے۔صرف ایک چالان ادا نہ کرنے پر گاڑی کو کس طرح روکا جاسکتا ہے سب انسپکٹر نے بغیر کوئی جواب دئے وکیل کی گاڑی کو ضبط کردیا ۔ مادھا پور ٹریفک کے سی آئی سرینواسن نے کہا کہ قواعد کے مطابق ایک بھی چالان زیر التوا رہتا ہے تو گاڑی کو ضبط کیا جا سکتا ہے سب انسپکٹر نے کوئی غلطی نہیں کی ہے