جرائم و حادثات

کاماریڈی میں ایک خاتون ٹیچر بنی سائبر کرائم کا نشانہ _ کریڈٹ کارڈ سے 87 ہزار روپے کی رقم غالب

ایم اے ماجد کی رپورٹ 

کاماریڈی _ 16 جون ( اردولیکس) تلنگانہ کے کاماریڈی میں ایک مسلم خاتون، جو ایک سرکاری اردو اسکول کی ٹیچر بتائی گئی ہے سائبر حملہ کا نشانہ بن گئی جس میں وہ 87 ہزار روپے سے زائد رقم سے محروم ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق خاتون ٹیچر منگل کو کاماریڈی کے ایس بی آئی برانچ میں اپنے کریڈٹ کارڈ کی منسوخی کے لیے درخواست دی تھی ۔ وہاں کے عملے نے انھیں بتایا کہ ان کا کریڈٹ کارڈ منسوخ کر دیا گیا ہے اور ای میل کے ذریعے اعلیٰ افسران کو بھیجا گیا ہے۔ انھیں یہ بھی بتایا گیا کہ کل صبح انھیں ایک فون کال آئے گا  جس میں ان سے  تفصیلات پوچھی جائیں گی ۔ خاتون کو  آج صبح نو بجے ایک فون کال موصول ہوا فون کرنے والے نے ان سے پوچھا کہ کیا آپ کریڈٹ کارڈ کینسل کر رہی ہے خاتون نے ہاں میں جواب دیا

۔جس پر فون کرنے والے نے ان  سے مکمل تفصیلات فراہم کرنے کو کہا ۔مکمل تفصیلات فراہم کرنے کے بعد ان کے کریڈٹ کارڈ اکاؤنٹ سے 87,753 روپے کاٹ لیے گئے۔  خاتون کا کہنا ہے کہ انھوں نے اپنا پن نمبر اور خفیہ کوڈ بتائے بغیر ان سے بات کی تھی جس پر خاتون نے فوری طور پر کاماریڈی ٹاؤن پولس اسٹیشن میں تحریری شکایت درج کرائی۔ پولیس نے مقدمہ درج کر لیا ہے اور تفتیش کر رہی ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button