غیر مجاز عمارت کی تعمیر پر مسلم شخص سے بھاری رقم کا مطالبہ کرنے والے بی جے پی کونسلر کے خلاف مقدمہ _تلنگانہ کے کورٹلہ بلدیہ کا واقعہ

کورٹلہ _ کورٹلہ پولیس نے بلدیہ سے اجازت حاصل کئے بغیر غیر مجاز طور پر عمارت تعمیر کرنے والے ایک مسلم شخص سے بھاری رقم کا مطالبہ کرنے والے بی جے پی کے کونسلر ایم  نریش سمیت سابق کونسلر اندوری ستیم کے خلاف مختلف دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا ہے۔یہ واقعہ جگتیال ضلع کے کورٹلہ بلدیہ کے وارڈ 22 موگلی پیٹ میں پیش آیا

۔جہاں شیخ حسین نامی شخص نے بلدیہ سے اجازت حاصل کئے بغیر پہلی منزل کے تعمیری کاموں کو انجام دیا۔جس پر متعلقہ وارڈ کے بی جے پی کونسلر ایم نریش نے شیخ حسین کی عمارت کو منہدم کروانے کی کوشش کی۔تاہم بلدیہ کی جانب سے کوئی کارروائی نہیں ہوسکی۔جس پر کونسلر نے ہائی کورٹ سے رجوع ہوتے ہوئے شیخ حسین کی عمارت کو منہدم کرنے کے آرڈرس حاصل کئے اور غیر مجاز طور تعمیر کردہ ڈھانچہ کو منہدم کروادیا۔بعد ازاں بی جے پی کونسلر نریش اور سابق کونسلر اندوری ستیم نے شیخ حسین سے 10 لاکھ روپے کا مطالبہ کیا۔ورنہ ان کا گراونڈ فلور بھی مکمل طور پر منہدم کروانے کی دھمکی دی۔اس طرح شیخ حسین نے ڈھائی لاکھ روپے ادا کئے

 

۔اس کے بعد بھی یہ دونوں بی جے پی کے قائدین شیخ حسین کو فون پر دھمکا رہے تھے شیخ حسین نے فون ریکارڈنگ اور ویڈیو ریکارڈنگ کی بنیاد پر ان دونوں کے خلاف پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کروائی۔جس پر پولیس نے دونوں کے خلاف مقدمہ درج کرتے ہوئے عدالتی تحویل میں دے دیا۔بتایا جاتا ہے ایم نریش کورٹلہ بلدیہ میں بی جے پی کا فلور لیڈر ہے اس کی ریکارڈنگ منظر عام پر آنے کے بعد جگتیال ضلع بی جے پی نے نریش کو فلور لیڈر کے عہدہ سے ہٹا دیا۔تاہم پارٹی سے ان دونوں کو معطل نہیں کیا گیا۔