کرنسی نوٹوں کو پوجا کے ذریعہ دو گنا کرنے کے نام پر دھوکہ دینے والے دو نقلی بابا عادل آباد میں گرفتار _ مسلم شخص اور ان کی بہن کو ہوا 29 لاکھ کا دھوکہ

عادل آباد _ کرنسی نوٹوں کو پوجا کے ذریعہ دو گنا کرنے کا وعدہ کرتے ہوئے دو نقلی بابا نے ایک شخص کے پاس سے 29 لاکھ روپے لے کر فرار ہوگئے۔یہ واقعہ تلنگانہ کے عادل آباد میں پیش آیا۔اس سلسلہ میں ضلع ایس پی عادل آباد ایم راجیش چندرا نے اپنے کیمپ آفس میں پریس کانفرنس منعقد کرتے ہوئے تفصیلات بتائی ۔

 

انہوں نے کہا کہ کم وقت میں آسانی سے زیادہ رقم کمانے کے لئے اوٹنور منڈل کے شیام پور کا رہنے والا 30 سالہ سوگرو اور گاندھی نگر عادل آباد کا 40 سالہ شنکر سنگیتا  نقلی بابا بن گئے۔ان دونوں نے نقد رقم کو پوجا کے ذریعہ دوگنی کرنے کا عوام سے وعدہ کرتے تھے جس پر یقین کرتے ہوئے نیو ھاوزنگ بورڈ کالونی کے رہنے والے محمد فاروق نے ان دونوں کو 15 جون کو اپنے گھر بلایا۔اور انھیں 50 ہزار روپے نقد رقم حوالے کی ۔اس رقم کو ایک کنڈے میں رکھ کر ان دونوں نے پوجا کی اور کچھ دیر بعد کنڈے سے 80 ہزار روپے نکال کر فاروق کے حوالے کردیا۔جس پر فاروق کو ان دونوں پر مکمل بھروسہ آگیا۔بعد ازاں فاروق کی بہن بھی ان دونوں کو گھر میں طلب کرکے ایک لاکھ روپے دیے ۔جسے انہوں نے ڈیڑھ لاکھ بنا دئے

 

۔زیادہ رقم کی لالچ میں بھائی اور بہن نے ان دونوں کو 29 لاکھ روپے کی رقم حوالے کی ۔اور یہ دونوں اس رقم کو کنڈے میں رکھ کر پوجا کی اور کچھ دیر بعد کنڈے سے رقم نکال لینے کا مشورہ دے کر وہاں سے چلے گئے۔ایک گھنٹے بعد فاروق اور ان کی بہن نے کنڈے میں دیکھا تو اس میں رقم نہیں تھی نقلی بابا اس رقم کو لے کر فرار ہوگئے۔جس پر پولیس میں شکایت درج کروائی گئی۔پولیس نے چار ماہ بعد دونوں نقلی بابا کو گرفتار کرلیا۔اور ان کے قبضے سے 11 لاکھ روپے، دو سیل فون ،لیاب ٹیاپ ضبط کرلیا۔