جنرل نیوز

حکومت بُلّی بائی ایپ ایجاد کرنے والوں کو سخت ترین سزا دے

بنگال: احمد حسین مظاہری نے مسلم خواتین کی آن لائن نیلامی”بُلّی بائی ایپ” کو لے کر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انٹرنیٹ پر انتہائی فحش اور نازیبا لفظ پرمشتمل بُلّی بائی ایپ کے ذریعے مسلم خواتین و لڑکیوں کی تصاویر سوشل میڈیا کی سائٹس سے لے کر ان کی نیلامی کی جارہی ہیں اور ان پر گندے گندے تبصرے کیے جارہے ہیں نیز مسلم خواتین کی تصویریں ان کی رضامندی کے بغیر اپلوڈ کیے جارہے ہیں۔

معتبر ذرائع کے مطابق یہ بات بھی موصول ہوئی ہے کہ یکم جنوری کے روز منظرعام پر آنے والی”بُلّی بائی ” کی تشکیل گیٹ ہب پر ہوئی ہےنیز 100سے زائد بااثر مسلم خواتین جس کی تصویریں گیٹ ہب پلیٹ فارم پر’ڈیل آف دی ڈے‘کے طور پر شیئر کی ہیں تاکہ ان کی نیلامی کی جاسکے۔

مذکورہ ایپ میں ان لڑکیوں کو نشانہ بنایا گیا ہے جو سوشل میڈیا پر مسلمانوں کے خلاف چلائی جانے والی مذموم مہم کی مخالفت کرتی ہیں!حیف در حیف! فی الوقت پوری دنیا اورپورا ملک کورونا وائرس اور اومیکرون سے ملول و خوفزدہ اور فکر مند ہے لیکن ایسی سچویشن و صورتحال میں بھی اس ملک میں مذہبی منافرت و عدم موانست پھیلائی جاری ہے۔ہماری قوم کی بنتِ حوّا پر اس قسم کی ہراسائی ناقابلِ برداشت ہے؛ایسی سائٹس بنانے والوں کو سزا دینا از بس ضروری ہے۔

لہذا اس قسم کی غیر شائستہ و نازیباحرکت کرنے والوں پر حکومت فی الفور گرفتار کا وارَنٹ جاری کرے نیز ان مجرموں پر سخت ،کرخت کارروائی کرے تاکہ مستقبل میں اس طرح کی حرکت کرنے کی کوئی جسارت نہ کرسکے۔

 

 

متعلقہ خبریں

Back to top button