کوویگزین کے دو خوراک لینے والوں کو کورونا سے متاثر ہونے کا کم خطرہ!

حیدرآباد _ ہندوستان میں تیار ہونے والی کورونا کی دو ویکسین کوویگزین اور کووی شیلڈ میں سب سے زیادہ اثر انداز کوویگزین بتائی گئی ہے کوویگزین لینے والوں کو کورونا سے متاثر ہونے کا کم خطرہ لاحق ہوتا ہے ایک تازہ تحقیق میں اس بات کا پتہ چلا ہے

تازہ مطالعے سے معلوم ہوا ہے کہ جن لوگوں نے بھارت بائیوٹیک کی جانب سے تیار کی جانے والی دیسی کوڈ ویکسین کوویگزین کی  دو خوراکیں لیں ، ان میں کورونا ہونے کا امکان کم دیکھا گیا ہے ۔ کوویگزین کی دو خوراک لینے والوں میں  محض 2.2 فیصد افراد کورونا سے متاثر ہوئے ہیں پونے میں سیرم انسٹی ٹیوٹ کی جانب سے تیار کی جانے والی کووی شیلڈ کے  دو خوراک لینے والوں میں انفیکشن کی شرح 5.5 فیصد پائی جاتی ہے۔یہ مطالعہ احمد آباد کے وجے رتنا ذیابیطس سنٹر ، کولکتہ کے جی ڈی اسپتال ، دھن آباد کے ذیابیطس سنٹر ، کارڈیک ریسرچ سنٹر ، اور مہاتما گاندھی میڈیکل کالج (جے پور) میں ڈاکٹروں کے ذریعہ کیا گیا تھا۔ یہ تحقیق 515 افراد پر کی گئی۔جن میں 305 مرد ، 210 خواتین شامل تھے   جنھوں نے ویکسین کی دو خوراک لے لی۔

البتہ اینٹی باڈیز   کووی  شیلڈ کے ذریعہ بڑی مقدار میں تیار ہورہی ہیں۔ کووی شیلڈ۔ کی  جن لوگوں نے دو خوراکیں لیں ان میں 127 ابزاربنس یونٹ (اے یو) فی ملی لیٹر خون میں اینٹی باڈیز پیدا ہوئیں ، جبکہ کوویگزین میں یہ تعداد صرف 53 ہے تاہم ملک میں تیار ہونے والے دو ویکسین بھی کافی اثر انداز ہیں