حیدرآباد کے مینا ملٹی اسپیشلٹی ہاسپٹل میں ایک خاتون نے 40 سال کی عمر میں تین بچوں کو جنم دیا

حیدرآباد _ مینا ملٹی اسپیشلٹی ہسپتال، حیدرآباد میں ایک خاتون نے 40 سال کی عمر میں تین بچوں کو جنم دیا۔ حیدرآباد کی ساکن 40 سال کی ایک خاتون گزشتہ 8 سال سے بانجھ پن کا علاج کر رہی تھی، بالآخر 7 ماہ قبل دوسری جگہ پر lIVF کے علاج کے بعد وہ حاملہ ہو گئی۔ الٹرا ساؤنڈ پر اسے ٹرپلٹس کا پتہ چلا، اس نے 5 دن پہلے مینا ہسپتال میں اطلاع دی۔ اس خاتون کے مختلف طبی معائنہ کئے گئے اور جب اسے سانس لینے میں تکلیف کی شکایت شروع ہوئی تو ماہرین امراض نسواں کی ٹیم نے حمل کے 29 ہفتوں میں سیزرین کرنے کا فیصلہ کیا۔ تینوں بچوں کا وزن بالترتیب 950 گرام، 850 گرام اور 950 گرام ہے۔ چونکہ بچوں کا پیدائشی وزن کم ہے وہ سانس کی مدد پر ہیں اور NICU میں ہیں۔ پیر کو ان  کا آپریشن کیا گیا۔ 15 نومبر 2021 شام 5:15 بجے ڈاکٹر صہبہ شکور اور ڈاکٹر ودیا پر مشتمل ماہر امراض نسواں کی ایک ٹیمنے یہ آپریشن کیا۔ اینستھیزیا کی معاونت ڈاکٹر شکیب اور ڈاکٹر رابعہ نے کی۔ مریض کے پاس 3 نال اور 3 امینیٹک تھیلے تھے۔ چیف نیونٹولوجسٹ ڈاکٹر سچن نرکھیڑے نے بچوں کو  بہتر نگہداشت کے لیے این آئی سی یو میں داخل کرایا۔ ڈاکٹر سچن نے کہا کہ تینوں بچوں کی طبیعت ٹھیک ہونے لیے کم از کم 4-6 ہفتوں تک انھیں انتہائی نگہداشت کی ضرورت ہے۔