جرائم و حادثات

بچے کو فون دینا‌مہنگا پڑا۔ حیدرآباد میں ایک خاندان36لاکھ سے محروم

حیدرآباد: حیدرآباد میں ایک لڑکے نے آن لائن گیم کھیلتے ہوئے اپنے گھروالوں کے  لاکھوں روپئے گنوا دئیے۔عنبرپیٹ سے تعلق رکھنے والے 16 سالہ لڑکے نے اپنے دادا کا فون لے کراس میں ”فری فائر”نامی گیم ڈاون لوڈ کیا۔ اس نے فون کے ذریعہ اپنی ماں کے اکاونٹ سے 1500 روپئے سے کھیل شروع کیا، اس کے بعد دس ہزارروپئے گیم میں لگائے، پھر1500 روپئے اس طرح کرتے کرتے وہ 9 لاکھ روپئے گیم میں ہارگیا۔ اس اکاونٹ میں رقم ختم ہونے کے بعد اس کے بعد اس نے دوسرے بینک کے کھاتے سے گیم کی شروعات کی۔

ابتداء میں 2 لاکھ اس کے بعد ایک لاکھ 60 ہزاراورپھرایک لاکھ 45 ہزارروپئے داو پرلگادئیے۔ اس طرح گیم کھیلتے کھیلتے لڑکے نے دو بینک اکاونٹس میں رکھے 36 لاکھ داو پرلگادئیے اوررقم سے محروم ہوگیا۔ بعد اس نے چپ چاپ فون رکھ دیا۔ لڑکے کی ماں جب کسی کام سے اکاونٹ سے پیسے نکالنے گئی توبینک حکام نے اسے بتایا کہ اس کا کھاتہ خالی ہے جس پروہ حیرت زدہ رہ گئی۔

خاتون سائبرکرائم پولیس سے رجوع ہوئی اوربتایا کہ اس کا شوہرسائبرآباد پولیس کمشنریٹ میں خدمات انجام دیا کرتا تھا اوراس کی موت کے بعد یہ رقم انھیں حاصل ہوئی تھی جسے انھوں نے اپنے اچھے برے کیلئے بینک میں رکھا تھا جسے اس کے بیٹے نے گنوا دیا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button