کینیڈا میں مسلم خاندان کے چار افراد کا قتل _ مسلمانوں سے نفرت کرنے والے نوجوان نے پیدل چلنے والوں کو گاڑی سے روند ڈالا

حیدرآباد _ کینیڈا میں ایک مسلم  خاندان کے چار افراد کو گاڑی سے  ٹکر دے کر ہلاک کردیا گیا۔جو فٹ پاتھ پر اپنے مکان جا رہے تھے جاں بحق ہونے والوں میں  ماں، بیٹا ،بہو اور پوتری شامل ہے جبکہ 9  سالہ پوترہ شدید زخمی ہے جس کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے میڈیا رپورٹس کے مطابق یہ واقعہ مسلمانوں سے نفرت میں انجام دیا گیا ہے آور گاڑی چلانے والے کی عمر صرف 20 سال ہے جس نے مسلم خاندان کو نشانہ بنایا۔

یہ واقعہ کینڈا کے اونٹاریو صوبہ کے لندن سٹی میں پیش آیا۔پولیس عہدیداروں کے مطابق  کینڈا کا شہری 20 سالہ نیتھانیل ویلٹ ایک ٹرانسپورٹ گاڑی کی مدد سے فٹ پاتھ پر چلنے والے مسلم خاندان کو روند ڈالا۔جاں بحق ہونے والوں کے نام ظاہر نہیں کئے گئے۔بتایا جاتا ہے کہ اس واقعے میں 77 خاتون کا 46  سالہ بیٹا، 44 سالہ بہو، 15  سالہ پوتری جاں بحق ہوگئے۔اور 9 سالہ پوترہ شدید زخمی ہے یہ خاندان پاکستان سے تعلق رکھتا ہے پولیس نے قاتل کو ایک شاپنگ مال سے گرفتار کرلیا۔اور پوچھ تاچھ شروع کردی۔کینیڈا کے وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے نفرت میں انجام دئے گئے اس حملہ کی سخت مذمت کی۔ اور اسے دہشت گردی کا واقعہ قرار دیا۔انہوں نے اس واقعہ پر ملک کے مسلمانوں کو یقین دلایا کہ وہ ان کے ساتھ کھڑے رہیں گے