بیٹی کی محبت کی شادی _ باپ نے مکان کو جلا ڈالا _ 7 افراد زندہ جل کر فوت

حیدرآباد_ بیٹی کی جانب سے محبت کی شادی کرلینے  پر  ایک شخص نے  اپنے  خاندان کے 7  افراد کو زندہ جلا دیا۔ یہ انسانیت سوز واقعہ پاکستان کے صوبہ پنجاب میں پیش آیا۔اس واقعہ میں اس کی دو بیٹیاں ، داماد اور چار نواسے نواسی  جل کر فوت ہوگئے۔صوبہ پنجاب کے مظفر گڑھ سے تعلق رکھنے والا منظور حسین کی بیٹی فوزیہ بی بی نے ایک سال قبل محبوب احمد نامی شخص سے محبت کی شادی کرلی ۔منظورحسین کو یہ رشتہ پسند نہیں تھا اس کے باوجود فوزیہ نے گھر سے بھاگ کر شادی کرلی تھی جس کے بعد  فوزیہ کو گھر میں آنے نہیں دیا جا رہا تھا

بتایا گیا ہے کہ فوزیہ اپنے  ایک ماہ کے شیرخوار کے ساتھ اپنی بڑی بہن سے ملاقات کرنے اس کے گھر آئی۔اس کا علم ہونے پر منظور حسین نے اپنے لڑکے شبیر حسین کے ساتھ وہاں پہنچا اور بڑی بیٹی کے مکان پر پٹرول چھڑک کر آگ لگا دی۔جس میں اس کی دو بیٹیاں فوزیہ، خورشید بیگم ،داماد  سمیت چار بچے آگ میں زندہ جل گئے۔منظور حسین کے دوسرے داماد محبوب احمد نے پولیس میں شکایت درج کرائی۔

 

فوزیہ کے شوہر محبوب احمد نے  پولیس کو بتایا کہ وہ اس واقعے کے  وقت گھر پر نہیں تھا۔ اور اسی وقت وہاں پہنچا تھا اس نے منظور حسین اور ان کے بیٹے شبیر حسین کو موقع سے فرار ہوتے دیکھا گیا ۔ دوسری جانب پاکستان کے ہیومن رائٹس کمیشن کے اعداد و شمار بتاتے ہیں کہ ہر سال سینکڑوں خواتین کو ان کے والدین کی ناپسندیدہ شادیوں کی وجہ سے غیرت کے نام پر قتل کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔ پولیس منظور حسین  اور اس کے بیٹے کی تلاش میں ہے۔