عبدالرزاق گرنہ ادب میں نوبل انعام جیت لیا

حیدرآباد _ تنزانیہ کے ناول نگار عبدالرزاق گرنہ نے ادب میں  سال 2021 کا   نوبل انعام جیت لیا ۔ عبدالرزاق کے  لکھنے کا انداز  خلیج کی مختلف ثقافتوں سے تعلق رکھنے والے مہاجرین کی زندگی کو واضح طور پر ظاہر کرتا ہے۔ عبدالرزاق 1948 میں پیدا ہوئے۔ وہ زنزیبار جزائر میں پرورش پائی ۔ وہ 1960 کی دہائی میں پناہ گزین کی حیثیت سے انگلینڈ پہنچے۔ عبدالرزاق گرنہ  کینٹربری میں یونیورسٹی آف کینٹ میں انگریزی اور پوسٹ کالونیئل لٹریچر کے شعبے میں پروفیسر کی حیثیت سے خدمات انجام دیں ۔اور  حال ہی میں ریٹائر ہوئے ۔ عبدالرزاق نے کل دس ناول لکھے۔ان کی  اور بھی بہت سی مختصر کہانیاں شائع ہو چکی ہیں۔ انہوں نے 21 سال کی عمر میں لکھنا شروع کیا۔ ان کی پہلی زبان سواحلی تھی۔ لیکن انھوں نے اپنے ادبی عمل کے لیے انگریزی کا انتخاب کیا۔