انٹر نیشنل

افغانستان، لڑکیوں کے اسکول دوبارہ کھولنے کا طالبان سے مطالبہ۔ تعلیمی ادارے مستقل بند نہیں کئے گئے: ترجمان

نئی دہلی: افغانستان میں چھٹویں جماعت اوراس کے آگے کی کلاسس میں زیرتعلیم تمام لڑکیوں کیلئے اسکولس بند کردئیے جانے سے متعلق طالبان حکومت نے کہا ہے کہ یہ فیصلہ مستقل نہیں عارضی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق افغان وزارت خارجہ کے ترجمان عبدالقہار بلخی نے کہا کہ لڑکیوں کے اسکولوں پر پابندی عارضی ہے مستقل نہیں۔ وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہزیادہ تر افغان تعلیم اور خواتین کے بارے میں بہت سخت گیر ہیں اور اسی وجہ سے لڑکیوں کے اسکول بند کر دیئے گئے ہیں۔ واضح رہے کہ قریب 11 ماہ سے تعلیمی ادارے بند ہونے کی وجہہ سے اسکولس میں زیرتعلیم لڑکیاں گھروں میں ہی ہیں ان لڑکیوں نے طالبان سے ایک بار پھر اسکول کھولنے کا مطالبہ کیا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button