جی آئی او کی برائی مٹاؤ مہم _ جگتیال یونٹ کی جانب سے پوسٹر کی اجرائی

 

جگتیال _ سماج  میں بڑھتی ہوئی برائیوں کے خلاف گرلس اسلامک آرگنائزیشن تلنگانہ نے ایک مہم شروع کی ہے۔کبھی آپ نے سوچا بھی ہےکہ کچھ برائیاں جس میں فحش بینی،بے راہ روی اور خصوصاملت کی نوجوان پڑھی لکھی لڑکیوں کا ارتدادکا شکار ہو نا اور اپنے آپ کو غیروں کے ساتھ شادی رچانا اور اِس تمام معاملے میں والدین کی بے بسی یہ سب برائیاں کیوں پھیل رہی ہیں ۔اور اس نے ہماری نوجوان ملت کی بیٹیوں کو تباہی کے دہانے پر لاکھڑا کیا ۔بلکہ تباہ کردیا ہے ۔اس لیے تنظیم جی آئی او نے یہ فیصلہ کیاکہ برائیوں کو مٹاؤ ملت کو بچاؤ کا نعرہ صرف نعرہ ہی نہ رہے بلکہ عملا ہم ملت کی بیٹیوں اور بہنوں سے یہ بھی کہنا چاہتے ہیں کہ اے بہن!اے بیٹی اپنے کردار کو نکھار اور ماحول کو بدل۔اس مہم کے مقاصد میں ایک تو یہ کہ ملت یہ جان لے کہ اُسکی زندگی کا مقصد ہی "نہی عن المنکر”ہے اور دوسری بات ملت کی ملت کی بیٹیوں میں برائیوں کے بارے میں شعور بیدار ہو اور ان برائیوں کے نقصانات سے واقف کروانا اور ان برائیوں کو مٹانا ۔اس مہم کےذریعہ ہم ملت کی بہنوں اور بیٹیوں کو یہ پیغام دینا چاہتے ہیں کہ برائیوں کے اس سونامی کے خلاف ہاتھ سے ہاتھ ملاکر کندھے سے کندھا ملا کر بندھ باندھنے کی کوشش کریں اجتماعی جدوجہد کا موثر آغاز کریں تاکہ اُمتِ مسلمہ دنیوی عذاب سے محفوظ اور خدا کے آگے سرخرو ہو سکے ۔چونکہ آقاۓ نامدار نے فرمایا برائی کو دیکھو تو ہاتھ سے روکو یا کم از کم زبان سے روکنے کی کوشش کرو یا پھر آخر درجہ میں دل میں بُرا سمجھو۔ہم اپنی ملت کی بہنوں اور بیٹیوں سے خواہش کرتے ہیں کہ اس "بُرا ئی مٹاؤ ” مہم میں شامل ہو کر اپنے آپ کو بھی ان برائیوں سے بچانے کی کوشش کریں۔ورنہ ہم بھی یہ جان لے کہ برے لوگوں سے نہیں بلکہ اچھے لوگوں کی خاموشی کی وجہہ سے دنیا بد سے بدتر ہوتی جارہی ہے لہذا برائیوں پر صرف افسوس ہی نہ کرتےرہ جائیں بلکہ اس کے خاتمے میں اپنا مثبت کردار ادا کرنے میں ہمارے ساتھ عملی جدوجہد میں شامل ہو جائیں ۔
اس موقع پر صدر جی آئی او جگتیال یونٹ ام رفدہ شفاء، محترمہ شاداب ام ہانی صاحبہ مقامی ناظمہ خواتین جماعت اسلامی ہند جگتیال، حبیبہ لطیفی صاحبہ معاون ناظمہ خواتین جماعت اسلامی ہند جگتیال ممبرس جی آئی او صباآفرین، منزہ منیر، رمشا ماہین اور امیر مقامی جناب عماد الدین عمیر بھی موجود تھی۔