کورونا کے ٹیکہ کی قیمت سے صرف 150 روپے زائد وصول کرنے خانگی ہاسپٹلس کو وزیراعظم کی ہدایت

نئی دہلی _ وزیراعظم نریندر مودی نے قوم سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ  پرائیویٹ اسپتالوں کے ذریعے 25 فیصد ٹیکے براہ راست خریدنے کا سلسلہ حسب معمول جاری رہے گا۔ ریاستی حکومتیں اس بات کی نگرانی کریں گی کہ پرائیویٹ اسپتالوں کے ذریعے ٹیکہ کی طے شدہ قیمت کے اوپر صرف 150 روپے کا سروس چارج وصول کریں۔

کئی ریاستوں نے ٹیکہ اندازی کی حکمت عملی پر دوبارہ غور کرنے اور یکم مئی سے پہلے والے نظام کو واپس لانے کا مطالبہ کیا تھا، جس پر وزیر اعظم نے اعلان کیا کہ اب یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ 25 فیصد ٹیکہ کاری جو ریاستوں کے سپرد تھی، وہ اب حکومت ہند کے ذریعے کرائی جائے گی۔ اسے دو ہفتوں میں شروع کیا جائے گا۔ دو ہفتوں میں، مرکز اور ریاستیں نئی گائیڈ لائنس کے مطابق ضروری تیاریاں کریں گی۔ وزیر اعظم نے مزید اعلان کیا کہ 21 جون کے بعد، حکومت ہند 18 سال سے زیادہ عمر کے سبھی ہندوستانی شہریوں کو مفت ٹیکہ فراہم کرائے گی۔ حکومت ہند ویکسین تیار کرنے والوں سے ان کی کل پیداوار کا 75 فیصد خریدے گی اور ریاستوں کو مفت فراہم کرے گی۔ کوئی بھی ریاست ٹیکوں پر کچھ بھی نہیں خرچ کرے گی۔ ابھی تک، کروڑوں لوگوں کو مفت ٹیکے لگ چکے ہیں، اب اس میں 18 سال سے زیادہ عمر والوں کو شامل کیا جائے گا۔ وزیر اعظم نے زور دیکر کہا کہ حکومت ہند تمام شہریوں کو مفت ٹیکہ مہیا کرائے گی۔