نیشنل

جارکھنڈ میں مسلم شخص پر بی جے پی کارکنوں کا حملہ _ جئے سری رام کے نعرے لگانے کے لئے کیا گیا مجبور _ ویڈیو دیکھیں

نئی دہلی _ 8 جنوری ( اردو لیکس ڈیسک) جارکھنڈ کے  دھنباد میں بی جے پی کارکنوں کی شرمناک حرکت سامنے آئی ہے، جہاں دھنباد ایم ایل اے راج سنہا کی موجودگی میں ایک شخص کے ساتھ غیر انسانی سلوک کیا گیا۔ جے شری رام کے نہ بولنے پر پہلے تو بی جے پی کارکنوں نے انہیں خوب مارا پیٹا اور اٹھک بیٹھک کروایا اور پھر انہیں سڑک پر تھوکنے کی ہدایت دیتے ہوئے اس تھوک کو چٹوایا گیا ۔

بی جے پی کے کارکنوں کا الزام ہے کہ گاندھی چوک کے پاس ہم وزیر اعظم مودی کی سیکورٹی کے واقعہ پر پنجاب حکومت کے خلاف احتجاج کررہے تھے اس دوران اس مسلم شخص نے مودی کو برا بھلا کہا اور گالی دی۔جس پر احتجاج میں شامل پارٹی کارکنوں نے یہ حرکت کی۔

اس معاملے کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد چیف منسٹر نے نوٹس لیتے ہوئے پولیس کو فوری کارروائی کرنے کی ہدایت کی۔

سوشل میڈیا پر ویڈیو وائرل ہونے کے بعد چیف منسٹر ہیمنت سورین نے دھنباد کے ڈپٹی کمشنر کو ہدایت دی ہے کہ وہ معاملے کی تحقیقات کریں اور سخت کارروائی کرتے ہوئے قصورواروں کو مطلع کریں۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ امن سے رہنے والے جھارکھنڈ کے لوگوں کے درمیان اس ریاست میں دشمنی کی کوئی جگہ نہیں ہے۔

 

 

 

متعلقہ خبریں

Back to top button