نیشنل

پولیس عہدیداروں نے کورٹ ہال میں جج پر حملہ کردیا _ ریاست بہار میں غنڈہ گردی کی انتہا

پٹنہ _ بہار میں پولیس کی غنڈہ گردی کا ایک واقعہ سامنے آیا ہے جہاں پولیس کے دو  ذمدار  عہدیداروں نے  ایک ایڈیشنل ڈسٹرکٹ جج پر اس وقت حملہ کردیا جب جج عدالت میں ایک مقدمہ کی سماعت کررہے تھے ۔ یہ واقعہ مدھو بن ضلع میں پیش آیا۔

مقدمے کی سماعت کے دوران ایک انسپکٹر اور سب انسپکٹر کمرہ عدالت میں داخل ہوئے اور جج کو زدوکوب کیا۔ ان پر ریوالور بھی تان دی  ۔کمرے عدالت میں موجود جج اور دیگر وکلاء اس غیر متوقع واقعہ سے حیران رہ گئے۔ یہ واقعہ ریاست بہار کے مدھوبنی ضلع کے جھارپور کورٹ میں جمعرات کو پیش آیا۔

 

گھوگھڑیہا پولیس اسٹیشن کے اسٹیشن ہاؤس آفیسر گوپال پرساد، اور سب انسپکٹر ابھیمنیو کمار جمعرات کی صبح جھارپور کی ضلعی ایڈیشنل اینڈ سیشن کورٹ پہنچے۔جہاں ان دونوں پولیس عہدیداروں کو ایک مقدمہ میں جج نے طلب کیا تھا

جج اویناش کمار نے ایک مقدمہ میں مدھوبنی ضلع ایس پی اور مذکورہ پولیس عہدیداروں کے خلاف ریمارکس کئے تھے اور ان کے خلاف فیصلہ دیا تھا

ان دونوں کو ایک کیس کے سلسلے میں عدالت میں پیش ہونا ہے۔ اس کے پیش نظر جمعرات کو یہ دونوں عدالت آئے۔ تاہم وہاں ایک اور کیس کی سماعت ہو رہی تھی تو وہ اچانک کورٹ ہال میں داخل ہوکر جج اویناش کمار پر حملہ کردیا۔

عدالتی عملے اور وکلاء نے  جج کو بچانے دونوں پولیس عہدیداروں پر جوابی کارروائی کی۔ اس واقعے میں پولیس عہدیدار گوپال پرساد اور ابھیمنیو کمار بھی زخمی ہوئے۔ بعد میں انہیں پولیس نے گرفتار کر لیا۔

نجر پور بار ایسوسی ایشن نے جج پر پولیس حملے کی مذمت کی ۔ اسوسی ایشن کے قائدین نے کہا کہ ‘پہلے ہمیں مجرموں سے تحفظ حاصل کرنا پڑتا تھا۔ اب ہمیں پولیس سے بھی تحفظ حاصل کرنا ہوگا،” ایک وکیل نے  مطالبہ کیا کہ ایس پی کے ساتھ  دونوں ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے اور انہیں سزا دینے کو یقینی بنانے کے لیے جلد ٹرائل کیا جائے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button