نیشنل

یاتی نرسنگھا نند کی مشکلات میں مزید اضافہ

نئی دہلی _ 21 جنوری ( اردو لیکس) مسلمانوں کے خلاف نفرت انگیز تقاریر اور بیانات دینے والے سوامی یاتی نرسنگھا نند کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوا ہے پہلے ہی یاتی نرسنگھا نند کو ہریدوار پولیس نے نفرت انگیز تقریروں کے الزام میں گرفتار کرلیا تھا اور جمعرات کے روز عدالت نے انھیں ضمانت دینے سے بھی انکار کردیا تھا

تازہ طور پر یاتی نرسنگھا نند کے خلاف دستور ہند اور سپریم کورٹ کی توہین کے الزامات کا سامنا ہے سپریم کورٹ کے خلاف یاتی نرسنگھا نند کے مبینہ قابل اعتراض تبصرے کے معاملے میں عدالت کو  توہین عدالت کی کارروائی شروع کرنے کے لئے اٹارنی جنرل کے کے وینوگوپال نے جمعہ کو اپنی منظوری دے  دی ہے ۔

ممبئی میں مقیم سماجی کارکن شچی نیلی کی جانب سے نرسگھا نند کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کی مانگ کرنے والے ایک خط کے جواب میں مسٹر وینوگوپال نے کہا ’’میں نے آپ کے خط اور یاتی نرسنگھا نند کے ذریعہ دیئے گئے بیانات کی ویڈیو دیکھی ہے۔

میرے خیال میں یاتی نرسنگھا نند کا یہ مبینہ بیان ’’جو لوگ اس نظام پر یقین رکھتے ہیں، ان سیاست دانوں میں، سپریم کورٹ میں اور فوج میں سبھی کتے کی موت مریں گے‘‘ سپریم کورٹ کے وقار کے ساتھ کھلواڑ اور اس کی توہین کے زمرے میں آتا ہے

 

 

متعلقہ خبریں

Back to top button