نیشنل

مسجد میں شیولنگ کا وجود صرف الزام ہے ابھی تک ثابت نہیں ہوا: گیان واپی مسجد تنازعہ کیس میں مسلم فریق کا عدالت میں موقف

لکھنو_ 26 مئی ( اردولیکس) وارانسی ڈسٹرکٹ کورٹ میں گیان واپی مسجد تنازعہ کے کیس کی سماعت ہوئی۔ اس موقع پر مسلم فریق اس بات پر تشویش کا اظہار کیا کہ شیولنگ کا وجود صرف الزام ہے اور ابھی تک ثابت نہیں ہوا ہے۔مسلم فریق نے کہا کہ افواہوں کے نتیجے میں عوامی انتشار پیدا ہو رہا ہے جس کی اجازت اس وقت تک نہیں دی جانی چاہیے جب تک شیولنگ ثابت نہ ہو جائے۔

ہندو فریق کے وکیل، وشنو شنکر جین نے ڈسٹرکٹ جج کو مطلع کیا کہ گیان واپی مسجد کے اندر پائے جانے والے مبینہ شیولنگ کو  نقصان پہنچایا گیا ہے۔سماعت کے دوران کورٹ کمشنر وشال سنگھ عدالت میں موجود تھے بعد ازاں عدالت نے مسلم فریق کو  30 مئی بروز پیر دوپہر 2 بجے دوبارہ اپنے اعتراضات پیش کرنے کی ہدایت دی ۔

 

 

متعلقہ خبریں

Back to top button