نیشنل

ایک ہی خاندان کے چار افراد کی خودکشی _ چار سالہ لڑکی نعشوں کے ساتھ پانچ دن گزارے

بنگلور _  بنگلور شہر کے بیدراہلی علاقے میں ایک خاندان کے چار افراد نے خودکشی کرلی۔ خودکشی کے پانچ دن بعد رشتہ داروں کو اس کا علم ہوا۔اس واقعہ میں انتہائی افسوس کی بات یہ تھی کہ اس گھر میں ایک چار سالہ لڑکی بھی رہتی تھی جو پانچ دنوں تک بھوکی حالت میں نعشوں کو دیکھتے رہی۔خودکشی کرنے والوں میں لڑکی کی ماں سنچنا (34) ، نانی  بھرتی (51) ، خالہ سندھرانی (31) اور ماموں مدھوساگر (25)  شامل ہیں ان کی لاشیں بیدرالہ پولیس اسٹیشن کے حدود ایک گھر کی چھت سے لٹکی ہوئی پائی گئیں۔ جس کمرے میں مدھوساگر نے پھانسی لیکر  تھی وہاں پانچ سالہ لڑکی بے ہوشی کی حالت میں پائی گئی جو کہ پانچ دن سے بھوکی تھی۔ پولیس نے بتایا کہ بچی کو فوری طور پر ہسپتال لے جایا گیا جہاں اس کا  علاج کیا گیا۔

 

پولیس نے بتایا کہ  چار افراد نے گھر کے مختلف کمروں میں خودکشی کی ۔ بنگلور کے ڈی سی پی سنجیو ایم پاٹل نے بتایا کہ لاشوں کو پوسٹ مارٹم کے لیے اسپتال منتقل کیا گیا۔ پولیس نے بتایا کہ اگرچہ یہ خودکشی کا معاملہ ہے ، تاہم پوسٹ مارٹم میں اس کی تصدیق کی ضرورت ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button