نیشنل

گوا میں کانگریس ارکان اسمبلی کی بغاوت _ اپوزیشن لیڈر مائیکل لوبو کے خلاف کانگریس ہائی کمان کی کارروائی

نئی دہلی _ 11 جولائی ( اردولیکس)  گوا کانگریس میں بغاوت ہوگئی ہے اور وہاں کے کانگریس کے دو تہائی سے زیادہ ایم ایل اے بھارتیہ جنتا پارٹی میں شامل ہو سکتے ہیں۔کانگریس قیادت نے پارٹی میں بغاوت کو دیکھتے ہوئے  اپوزیشن لیڈر مائیکل لوبو کو عہدے سے ہٹا دیا ہے۔

اسی دوران کل ہند  کانگریس کمیٹی کے گوا کے انچارج دنیش گنڈو راؤ نے کہا کہ پارٹی کو کمزور کرنے کے لیے لوبو اور سابق چیف منسٹر دگمبر کامت کی قیادت میں ایک سازش رچی گئی تھی۔ بی جے پی، کانگریس کا دو تہائی حصہ تقسیم کرنے کی کوشش کر رہی تھی۔ ان کی  یہ کوشش تھی کہ ہمارے کم از کم 8 ایم ایل اے بغاوت کردیں۔ ہمارے بہت سے اراکین اسمبلی کو بڑی رقم کی پیشکش کی گئی ہے۔ میں اس پیشکش سے حیران ہوں، لیکن ہمارے 6 اراکین اسمبلی مضبوطی سے ڈٹے ہیں اور مجھے ان پر فخر ہے۔
انہوں نے کہا کہ ریاست کے سابق چیف منسٹر دگمبر کامت کے بھی اس معاملے میں ملوث ہونے کا امکان ہے اور اعلی کمان کی جانب سے حقائق کی بنیاد پر ان کے خلاف سخت کارروائی
کی جا رہی ہے
گوا قانون ساز اسمبلی  40 ارکان پر مشتمل ہے جن کانگریس کے 11 ایم ایل اے  ہیں۔ بی جے پی کے پاس 20 ایم ایل اے ہیں۔  بی جے پی کی قیادت میں دو ایم جی پی ایم ایل ایز اور تین آزاد ایم ایل ایز کی حمایت سے حکومت تشکیل دی گئی تھی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button