مبارکباد

بغیر محرم کے خواتین کو حج کی سہولت _ آزادی کے بعد پہلی مرتبہ مرکز نے ہٹائی پابندی : مختار عباس نقوی

بغیر محرم کے خواتین کو حج کی سہولت _ آزادی کے بعد پہلی مرتبہ مرکز نے ہٹائی پابندی : مختار عباس نقوی

نئی دہلی _ اقلیتی امور کے  مرکزی وزیر جناب مختار عباس نقوی نے آج  لوک سبھا میں ایک تحریری جواب میں بتایا کہ حج کے پورے عمل کو 100 فیصد ڈیجیٹل / آن لائن بنایا گیا ہے، جس سے  بھارت کے مسلمانوں کے لئے ’’حج کرنے کی آسانی‘‘ کا خواب  پورا ہوا ہے۔حج کے پورے عمل کو آن لائن / ڈیجیٹل بنائے جانے سے حج کا عمل آسان اور شفاف ہوگیا ہے اور  بچولیوں کا خاتمہ ہوگیا ہے جس سے  اس بات کو یقینی بنایا گیا ہے کہ حج سبسڈی  ختم کئےجانے کے بعد بھی  زائرین حج پر  اب کوئی فاضل  مالیاتی بوجھ نہیں ڈالا جائے گا۔ حج  کے عمل  کے ڈیجیٹائزیشن سے  عازمین حج  پرائیویٹ حج تنظیموں ، حج کمیٹی آف انڈیا اور حج کے بندوبست میں شامل دیگر متعلقین، سبھی کو فائدہ ہوا ہے۔ حج 2020 کے لئے  حج درخواستوں کے آن لائن رجسٹریشن کا عمل  یکم نومبر 2021 سے شروع ہوگیا ہے اور خواہش مند عازمین حج سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ  پورٹل  www.hajcommittee.gov  کے ذریعہ  اور موبائل ایپ کے ذریعہ  31 جنوری 2022 تک اپنی درخواستیں جمع کرادیں۔

 

کئی دہائیوں سے بھارت کی مسلم خواتین یہ مطالبہ کررہی تھیں کہ مسلم خواتین پر بغیر محرم  (مرد ساتھی) کے  حج  کرنے پر حکومت کی جانب سے لگائی گئی  عائد پابندی ہٹا لی جائے کیونکہ یہ پابندی  حج پر جانے کی خواہش مند تنہا خواتین  اور دیگر کام کرنے والی خواتین مثلاً ٹیچرز ، ڈاکٹرز، نرسوں، صنعت کاروں کو  فریضہ حج ادا کرنے کے لئے  محرم کے بغیر حج  پر جانے سے روکتی تھی۔ آزادی کے بعد سے پہلی مرتبہ سال 2018 میں خواتین کے بغیر محرم کے حج کرنے پر عائد پاندی ہٹالی گئی اور  اب بغیر محرم کے 3401 خواتین فریضہ حج ادا کرچکی ہیں۔ حج 2020 اور حج 2021 کے لیے  بغیر محرم والی 2980 خواتین نے حج کے لیے درخواستیں دی تھیں لیکن کووڈ  عالمی وبا کی وجہ  فریضہ حج کی ادائیگی نہیں ہوسکی۔ اب   حج 2022 کے لیے ایسی تمام خواتین اورنئی خاتون درخواست کنندگان (بغیر محرم والی ) قرعہ اندازی کے بغیر حج ادا  کرنے کی اہل ہوں گی۔

 

 

متعلقہ خبریں

Back to top button