حضرت مولانا سید محمد رابع حسنی ندوی صاحب ، کل ہند مسلم پرسنل لا بورڈ کے دوبارہ صدر منتخب

حیدرآباد _ ‏حضرت مولانا سید محمد رابع حسنی ندوی صاحب کو کانپور میں منعقدہ کل ہند مسلم پرسنل لا بورڈ کے 27 ویں  اجلاس میں متفقہ طور پر اگلی میعاد کیلئے آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کا دوبارہ صدر منتخب کرلیا گیا ہے۔

محمد رابع حسنی ندوی (پیدائش:1929ء) بھارت کے ایک عالم دین[1] عربی اور اردو زبانوں میں تقریباً 30 کتابوں کے مصنف ہیں۔[2] رابع حسنی ندوی آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے چوتھے صدر[3][4][5] اور دار العلوم ندوۃ العلماء کے حالیہ ناظم ہیں۔[6][7] نیز مولانا رابع حسنی ندوی عالمی رابطہ ادب اسلامی ریاض (سعودی عرب) کے نائب صدر [8] اور رابطہ عالم اسلامی مکہ مکرمہ کے رکن اساسی بھی ہیں۔

 

ابتدائی تعلیم اپنے خاندانی مکتب رائے بریلی میں ہی مکمل کی، اس کے بعد اعلی تعلیم کے لیےدار العلوم ندوۃ العلماء میں داخل ہوئے۔ 1948ء میں دار العلوم ندوۃ العلماء سے فضیلت کی سند حاصل کی۔ اس دوران 1947ء میں ایک سال دار العلوم دیوبند میں بھی قیام رہا۔ 1949ء میں تعلیم مکمل ہونے کے بعد دار العلوم ندوۃ العلماء میں معاون مدرس کے طور پر تقرر ہوا۔ اس کے بعددعوت و تعلیم کے سلسلہ میں 1950-1951 کے دوران حجاز، سعودی عرب میں قیام رہا۔

میں دار العلوم ندوۃ العلماء کے کلیۃ اللغۃ العربیۃ کے وکیل منتخب ہوئے اور 1970ء کو عمید کلیۃ اللغۃ مقرر ہوئے۔ عربی زبان کی خدمات کے لیے انڈیا کونسل اترپردیش کے جانب سے اعزاز دیا گیا اس کے بعد اسی سال صدارتی اعزاز بھی دیا گیا۔

1993ء میں دار العلوم ندوۃ العلماء کے مہتمم بنائے گئے، اس کے بعد 1999ء میں نائب ناظم ندوۃ العلماء اور 2000ء میں مولانا ابو الحسن علی حسنی ندوی کی وفات کے بعد ناظم ندوۃ العلماء مقرر ہوئے۔ دو سال بعد جون، 2002ء میں حیدرآباد، دکن میں آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے سابق صدر قاضی مجاہد الاسلام قاسمی مرحوم کی وفات کے بعد متفقہ طور پر صدر منتخب ہوئے۔