مدرسے کی جدید کاری کی اسکیم کا نفاذ : راجیہ سبھا میں مختار عباس نقوی کا بیان

مدرسے کی جدید کاری کی اسکیم کا نفاذ : راجیہ سبھا میں مختار عباس نقوی کا بیان 

نئی دہلی _ ( پی آئی بی ) اقلیتی امور کے مرکزی وزیر جناب مختار عباس نقوی نے  آج راجیہ سبھا میں  ایک تحریر جواب میں  بتایا کہ  وزارت تعلیم کا اسکولی تعلیم اور خواندگی کامحکمہ  (ڈی او ایس ای ایل) مدارس/اقلیتوں کو تعلیم فراہم کرنے کے لئے ایک امبریلا  اسکیم (ایس پی ای ایم ایم) شامل کررہا ہے  جن میں دو اسکیمیں یعنی مدارس میں معیاری تعلیم فراہم کرنے کی اسکیم ( ایس پی کیو ای ایم) اور اقلیتی اداروں میں انفراسٹرکچر ڈیولپمنٹ (آئی ڈی ایم آئی)، شامل ہیں۔ یہ اسکیم  اقلیتی امور کی وزارت کو  یکم اپرل 2021 سے منتقل کی گئی ہے۔ اس اسکیم کے تحت سال 21۔2020 کے دوران  اسکولی تعلیم اور خواندگی کے محکمے کے ذریعہ  21428.285 لاکھ روپے کی رقم  جاری کی گئی ہے، جس میں  اسکیم کے تحت  مقرر کئے جانے والے اساتذہ کا  اعزازیہ  شامل ہے۔

 

ایس پی ای ایم ایم کے رہنما خطوط میں  نفاذ اور نگرانی کے طریقہ کار کا اہتمام بھی کیا گیاہے۔  یہ اسکیم  ریاستی حکومتوں کے تحت نافذ کی جاتی ہے۔ دونوں ایس پی ای ایم ایم  کے تحت تمام تجاویز ریاستی حکومت کے  سکریٹری ایجوکیشن اور اقلیتی امور کے سکریٹری سمیت، متعلقہ محکمہ کے سکریٹری کی صدارت میں ریاستی سطح کی کمیٹی کی منظوری سے ریاستی حکومت کے ذریعہ  جمع کرائی جاتی ہیں۔ریاستی سطح کی کمیٹی اسکیم کے تحت تجاویز کی جانچ کرتی ہے اور ان کی سفارش کرتی ہے۔ ریاستی حکومت سے تجاویز موصول ہونے پر، حکومت ہند کی متعلقہ وزارت کے سکریٹری کی صدارت میں قائم کیا گیا پراجیکٹ  منظوری بورڈ  اس کی  میرٹ پر غور کرتا ہے اور اسے منظوری دیتا ہے۔ ایس پی کیو ای ایم کے تحت فنڈز قسطوں میں جاری کیے جاتے ہیں۔ پہلی قسط پچھلے مالی سال کے عارضی استعمال کے سرٹیفکیٹ، جس پر ریاستی حکومت کے نوڈل محکمے  کے سکریٹری کے دستخط ہوں، ریاست کا حصہ جو کہ ریاستی بجٹ  کے بجٹ اہتمام کے مطابق  رواں مالی سال  میں  جاری کئے جانے  کے لئے قابل قبول ہے، کے جاری کئے جانے  اور فزیکل اور فائننشیل  پروگریس رپورٹ جمع کرائے جانے پر  جاری کی جاتی ہے۔  دوسری قسط پچھلے مالی سال کی آڈٹ شدہ یو سیز کی موصولی، پہلی قسط کے طور پر جاری کی گئی گرانٹس کے کم از کم 50 فیصد  کے استعمال، پہلی قسط میں ریاستی حصہ کے جاری کئے جانے  اورفزیکل اور فائننشیل پروگریس رپورٹ جمع کرانے پر جاری کی جاتی ہے۔ آئی ڈی ایم آئی   کے تحت فنڈز  معاون ادارے کی طرف سے متعلقہ حصہ کے جاری کئے جانے  پر مذکورہ  بالا رہنما خطوط کے مطابق جاری کیے جاتے ہیں۔