نیشنل

شیوسینا کے باغی ارکان اسمبلی کا دکھ بھرا خط چیف منسٹر ادھو ٹھاکرے کے نام جاری

ممبئی _ 23 جون ( اردولیکس) شیوسینا کے باغی ارکان اسمبلی نے پارٹی سربراہ و چیف منسٹر ادھو ٹھاکرے کے نام دکھ بھرا  خط لکھتے ہوئے اپنی تشویش کا اظہار کیا ہے۔ آسام کے گوہاٹی کے ایک ہوٹل میں کیمپ کئے ہوئے شیوسینا کے باغی ارکان اسمبلی نے اجتماعی طور پر یہ خط لکھا ہے جسے شیوسینا کے باغی لیڈر ایکناتھ شنڈے نے میڈیا کو جاری کیا۔اس خط میں شیوسینا کے باغی ارکان اسمبلی نے ان کے ساتھ گزشتہ ڈھائی سال سے ہورہی توہین کا تذکرہ کیا۔ انہوں نے خط میں لکھا کہ

” کل ورشا بنگلے کے دروازے عوام کے لیے کھول دیے گئے۔ بنگلے پر بھیڑ دیکھ کر خوشی ہوئی۔ شیوسینا کے ایم ایل اے کے طور پر ہمارے لیے یہ دروازے پچھلے ڈھائی سال سے بند تھے۔ ایک ایم ایل اے کے طور پر بنگلے میں داخل ہونے کے لیے ہمیں کافی  سوچنا پڑتا تھا، اس بنگلے میں عوام کے ذریعہ منتخب ہونے والے قائدین کی کوئی عزت نہیں ہے بلکہ قانون ساز کونسل اور راجیہ سبھا کے لئے منتخب قائدین کی عزت ہے

۔ شیو سینا کے ایم ایل اے کے طور پر جب ہم شیو سینا کے چیف منسٹر سے ملاقات کے لئے جاتے تو  ہمیں کبھی ورشا بنگلے تک براہ راست رسائی نہیں ملی۔ چیف منسٹر  چھٹی منزل پر سب سے ملتے ہیں لیکن ہمارے لیے ملاقات کا وقت نہیں دیتے۔

حلقہ کے کاموں، دیگر مسائل، ذاتی مسائل کے لیے کئی بار سی ایم صاحب سے ملنے کی درخواست کرنے پر کئی دنوں کے بعد وہاں  سے پیغام آتا کہ آپ کو ورشا بنگلے پر بلایا گیا ہے لیکن ہمیں گھنٹوں بنگلے کے گیٹ پر کھڑا کر دیا جاتا ۔

ہمارا سوال یہ ہے کہ تین سے چار لاکھ ووٹروں سے منتخب ہونے والے ایم ایل اے کے ساتھ ایسا توہین آمیز سلوک کیوں کیا جاتا ہے؟

متعلقہ خبریں

Back to top button