نیشنل

بی جے پی کی معطل شدہ ترجمان نوپور شرما کو ممبئی پولیس کی نوٹس

ممبئی _ 7 جون ( اردولیکس) مہاراشٹرا پولیس نے بی جے پی لیڈر نوپور شرما کو پیغمبر اسلام کے بارے میں متنازعہ تبصرہ کرنے پر نوٹس جاری کی ہے۔ انہیں 22 جون کو اپنا بیان ریکارڈ کرنے کے لئے پیش ہونے کی ہدایت دی گئی ہے ۔ ممبئی پولیس نے تھانے ضلع میں نوپور شرما کے خلاف مقدمہ درج کیا ہے۔

ممبرا پولیس نے نوپور شرما کو طلب کیا ہے۔ پولیس نے نوپور کو 22 جون کو پیش ہونے کو کہا ہے۔ درحقیقت نوپور شرما کے خلاف ممبرا، تھانے اور بدھونی میں پیغمبر اسلام کے بارے میں تبصرے کے لیے مقدمات درج کیے گئے ہیں۔ پولیس نے اسے اپنا بیان ریکارڈ کرانے کے لیے بلایا ہے۔

نوپور شرما نے حال ہی میں ایک ٹی وی مباحثے کے دوران پیغمبر اسلام محمد ﷺ کے بارے میں متنازعہ ریمارکس کئے تھے جس پر ہندوستان بھر کے مسلمانوں نے اس کے خلاف سخت احتجاج کیا۔ عرب ممالک نے بھی اس بیان کی مذمت کی ہے۔ اس کے بعد بی جے پی نے نوپور شرما کو معطل کر دیا۔ دوسری جانب نوپور شرما کے خلاف بھی کئی مقامات پر مقدمات درج ہیں۔

مہاراشٹر میں نوپور شرما کے خلاف تین مقدمات درج ہیں۔نوپور شرما کے خلاف پدھونی میں ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔ یہ مقدمہ ان کے خلاف رضا اکیڈمی نے درج کیا ہے۔ دوسری جانب محمد غفران خان نامی ٹیچر نے ممبرا میں نوپور شرما کے خلاف مقدمہ درج کرایا ہے۔ نوپور کے خلاف آئی پی سی کی دفعہ 153 اے، 153 بی، 295 اے، 298 اور 505 کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ تھانے میں بھی مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

دوسری طرف دہلی پولیس انہیں سیکورٹی فراہم کر رہی ہے۔ دہلی پولیس نے جان سے مارنے کی دھمکیوں کے پیش نظر نوپور شرما کو اضافی سیکورٹی فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button