ڈرگ پارٹی میں پکڑے گئے تین دیگر نوجوانوں کو کیوں چھوڑ دیا گیا _ مہاراشٹر کے وزیر نواب ملک کا سوال

ممبئی _ نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کے لیڈر اور مہاراشٹرا کے وزیر نواب ملک نے الزام لگایا ہے کہ کروز جہاز پر این سی بی کے عہدیداروں کا ریو پارٹی پر حملہ منصوبہ بند تھا۔ اور وہ صرف مخصوص شخصیت کے بیٹے کو نشانہ بنانے کے لئے کیا گیا تھا نواب ملک نے کہا کہ این سی بی عہدیدار سمیر وانکھیڈے ڈرگس پارٹی پر حملوں کے تناظر میں میڈیا کو گمراہ کن بیان دیا۔انہوں نے کہا کہ این سی بی نے بی جے پی کے ایک سینئر لیڈر کے خاندان کے ایک رکن کے ساتھ تین نوجوانوں کو رہا کیا جو پارٹی میں موجود تھے۔

نواب ملک نے یاد دلایا کہ سمیر وانکھیڈے نے کہا تھا کہ کروز جہاز پر دھاوے کے دوران 8 سے 10 افراد کو حراست میں لیا گیا تھا جبکہ 11 افراد کو ریو پارٹی میں گرفتار کیا گیا تھا۔ اور پھر رشبھ سچدیو ، پرتک گابا اور عامر فرنیچر والا کو رہا کر دیا گیا۔ نواب ملک نے کہا کہ وہ این سی بی سے مطالبہ کر رہے ہیں کہ وہ بتائیں کہ اگر کروز جہاز پر دھاوے کے وقت  11 افراد پکڑے گئے تو تینوں ملزمان کو کس کے حکم پر رہا کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ وہ چیف منسٹر ادھو ٹھاکرے کو خط لکھیں گے کہ  اس معاملے کی ممبئی پولیس اینٹی نارکوٹکس سیل سے آزادانہ انکوائری کروائیں ۔