بپن راوت ہیلی کاپٹر حادثے کی ابتدائی رپورٹ جاری

نئی دہلی _ 8 دسمبر 2021 کو ہوئے بپن راوت ہیلی کاپٹر حادثہ سے متعلق تینوں افواج پر مشتمل کورٹ آف انکوائری نے اپنے ابتدائی نتائج پیش کردیے ہیں۔ انکوائری ٹیم نے حادثہ کی سب سے زیادہ ممکنہ وجہ کا تعین کرنے کے لئے سبھی دستیاب گواہوں سے سوالات کرنے  کے ساتھ ساتھ فلائٹ ڈیٹا ریکارڈر اور کاک پٹ وائس ریکارڈر کا تجزیہ کیا۔ کورٹ آف انکوائری نے حادثہ کے سبب کے طور پر کسی میکنیکل ناکامی، سبوتاژ  یا کسی طرح کی لاپروائی کو خارج از امکان قرار دیا ہے۔ حادثہ  وادی میں  موسم کی صورت حال میں غیر متوقع تبدیلی کے سبب ہیلی کاپٹر کے بادلوں میں داخل ہوجانے کا نتیجہ تھا۔ اس کی وجہ سے پائلٹ کے لئے مقامی ماحول ناشناسی کی صورت حال پیدا ہوئی، جس کے نتیجے میں خطے میں پرواز کو محدود کرنا پڑا۔ اس نتائج کی بنیاد پر کورٹ آف انکوائری نے کچھ سفارشات کی ہیں جن کا جائزہ لیا جارہا ہے۔