نیشنل

چیرمین راجیہ سبھا وینکیا نائیڈو ایوان میں رو پڑے _ رونے کی وجہ یہ تھی!

نئی دہلی _ راجیہ سبھا کے چیرمین وینکیا نائیڈو نے گذشتہ روز ایوان میں اپوزیشن کے ارکان  کی بدتمیزی پر رو پڑے اور کہا کہ یہ بدقسمتی تھی کہ ایوان میں ایسی صورتحال پیدا ہوئی۔ آج صبح 11 بجے راجیہ سبھا سے خطاب کرتے ہوئے وینکیا نائیڈو نے کہا  کہ پارلیمنٹ جمہوریت کے لیے ایک مقدس مندر کی طرح ہے۔ لیکن بعض ارکان نے ایوان میں بدتمیزی کی۔ میزوں پر چڑھ کر بیٹھ گئے۔چند ارکان  میزوں پر کھڑے ہوگئے ۔ پوڈیم پر چڑھ کر احتجاج کرنا مندر میں احتجاج کرنے کے مترادف ہے۔ انھوں نے کہا کہ کل کے واقعہ سے انھیں نیند نہیں آئی ۔ یہ ایک انتہائی بدبختانہ واقعہ ہے  اتنے دنوں تک ایوان میں سرگرمیوں کو منجمد کرنا مناسب عمل نہیں ہے ۔یہ کہتے ہوئے وینکیا نائیڈو جذبات سے مغلوب ہوکر رو پڑے۔اس کے بعد ایوان کی کارروائی دوپہر 12 بجے تک ملتوی کر دی۔

اپوزیشن جماعتیں منگل کو راجیہ سبھا میں کسانوں کا مسئلہ اٹھایا تھا ۔ جب اس مسئلے پر بحث ہو رہی تھی ، کچھ ارکان نے کالے کپڑے لہراتے ہوئے اور کاغذات پھینک کر احتجاج کیا۔ ایک موقع پر کئی ارکان پارلیمنٹ اپنی  نشستوں پر  پر کھڑے ہوگئے جہاں پارلیمانی عملہ بیٹھا تھا۔ چند ارکان نے تقریبا ڈیڑھ گھنٹے تک بنچ پر لیٹے رہے۔ جس سے  ایوان  کی کارروائی کئی بار ملتوی ہوئی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button