نیشنل

جموں و کشمیر کے چار سابق چیف منسٹرس کی اسپیشل سیکوریٹی برخاست

جموں و کشمیر کے چار سابق چیف منسٹرس کی اسپیشل سیکوریٹی برخاست 

نئی دہلی _ 6 ،جنوری ( اردو لیکس) مرکزی حکومت نے جموں و کشمیر  کے چار سابق چیف منسٹرس کی اسپیشل سیکوریٹی بغیر اطلاع ہٹا دی گئی۔ اسپیشل سیکیورٹی گروپ (ایس ایس جی) کی  فہرست میں نیشنل کانفرنس لیڈر فاروق عبداللہ، ان کے بیٹے عمر عبداللہ، پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی اور کانگریس کے سینئر لیڈر غلام نبی آزاد شامل ہیں۔ مرکزی حکومت کے ذرائع نے بتایا کہ یہ فیصلہ سیکورٹی جائزہ میٹنگ کے بعد کیا گیا۔ ایس ایس جی جموں و کشمیر میں قائم ایک خصوصی سیکورٹی یونٹ ہے۔ جو سابق ریاست کے دوران چیف منسٹرس ، سابق چیف منسٹرس کو تحفظ فراہم کرنے کے لیے قائم کی گئی تھی ۔

مرکزی حکومت کے فیصلے پر سابق چیف منسٹر عمر عبداللہ نےکہا کہ  ایس ایس جی سیکیورٹی واپس لینے کا فیصلہ سیاسی ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ انہیں کم از کم سیکورٹی واپس لینے کے بارے میں مطلع نہیں کیا گیا ۔ ایسی حرکتوں سے ان کی آواز نہیں روک سکتے.. وقت سب سے اہم ہے۔ دوسری جانب محبوبہ مفتی نے کہا کہ انہیں سیکیورٹی واپس لینے کے بارے میں بھی نہیں بتایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ انہیں سرکاری طور پر مطلع نہیں کیا گیا۔ تازہ ترین فیصلے کے بعد چار سابق چیف منسٹرس کی سیکورٹی کی درجہ بندی کی جائے گی اور ان کی جان کو لاحق  خطرے کا اندازہ لگایا جائے گا اور جموں و کشمیر پولیس سیکورٹی ڈویژن کی طرف سے انھیں تحفظ فراہم کیا جائے گا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button