بڑی خبر _ تروپتی کے رویا ہاسپٹل میں 5 منٹ آکسیجن رک جانے سے 11 مریض فوت

تروپتی_ آندھراپردیش کے تروپتی میں واقع رویا  اسپتال میں ایک سنگین سانحہ رونما ہوا ہے۔جس میں 5 منٹ کے وقفہ میں آکسیجن کی سربراہی رک جانے پر  کورونا کے 11 مرہٹوں کی موت ہوگئی۔ چتور کے ضلع کلکٹر ہری نارائنن نے بتایا کہ آکسیجن کی فراہمی میں رکاوٹ کے باعث 11 کورونا متاثرین کی موت ہوگئی۔ انہوں نے بتایا کہ یہ واقعہ چنئی سے آکسیجن ٹینکر کی آمد میں 5 منٹ کی تاخیر کے باعث پیش آیا۔ تاہم ، ان کا کہنا تھا کہ بڑا حادثہ ٹل گیا ۔کیونکہ ہاسپٹل میں ایک ہزار کورونا کے مریضوں کا علاج ہورہا ہے ٹینکر پہنچنے کے فوری بعد آکسیجن کو بحال کردیا گیا۔آکسیجن پریشر کا مسئلہ پیر کی شب  8:30 بجے کے درمیان ہوا۔  انہوں نے کہا کہ دوسرے مریضوں کی حالت مستحکم ہے اور کسی کو بھی تشویش کرنے کی ضرورت نہیں ہے اسپتال میں کسی تکنیکی پریشانی کی اطلاع نہیں ملی۔ کلکٹر نے بتایا کہ 30 کے قریب ڈاکٹرس کورونا کے مریضوں کی نگرانی کر رہے ہیں۔ کلکٹر نے کہا کہ واقعے کی مکمل تحقیقات کروائی جائیں گی اور کارروائی کی جائے گی۔  اسپتال میں تقریبا 1000 افراد زیر علاج ہیں۔ اچانک آکسیجن کی فراہمی بند ہونے سے کوویڈ  کے شکار افراد دم توڑ گئے۔ ہاسپٹل کے پاس مریضوں کے رشتہ داروں کا ہجوم ہے چیف منسٹر وائی ایس جگن موہن ریڈی نے اس واقعہ پر گہرے دکھ کا اظہار کیا۔