نیشنل

چیف منسٹر مہاراشٹرا ادھو ٹھاکرے نے دے دیا استعفیٰ

چیف منسٹر مہاراشٹرا ادھو ٹھاکرے نے استعفی دے دیا ۔شیوسینا کے صدر ادھو ٹھاکرے نے ریاستی اسمبلی میں اکثریت ثابت کرنے کے لیے سپریم کورٹ کے فلور ٹیسٹ کے حکم کے چند منٹ بعد مہاراشٹر اکے وزیر اعلیٰ کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ قبل ازیں آج شام کو کابینہ کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے ادھو ٹھاکرے نے کہا تھا کہ انہیں ان کے اپنے لوگوں نے دھوکا دیا ہے۔

واضح رہے کہ چیف منسٹر ادھو ٹھاکرے نے کل اسمبلی میں طاقت کے امتحان سے قبل استعفیٰ دے دیا ہے۔ شیوسینا کے سربراہ سنیل پربھو نے سپریم کورٹ میں ایک عرضی دائر کی تھی جس میں گورنر کے اس حکم کو چیلنج کیا گیا ہے جس میں مہا وکاس اگھاڑی (ایم وی اے) حکومت کو اسمبلی میں فورس ٹیسٹ کرانے کی ہدایت دی گئی تھی۔ سپریم کورٹ کے تعطیلاتی بنچ نے گورنر کے فیصلے کو برقرار رکھا اور فورس ٹیسٹ پر روک لگانے سے انکار کر دیا جس کے فوری بعد وہ مستعفی ہوگئے ،ادھو نے استعفیٰ دے دیا کیونکہ شیوسینا کے باغی ایم ایل اے ایکناتھ شندے کی قیادت میں اکثریت رکھتے ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button