این آر آئی

شان رسالت محمدصلی اللہ علیہ وسلم میں گستائی کے خلاف شکاگو میں ہندوستانیوں کا زبردست احتجاج

 

رپورٹ :  ڈاکٹرمحمد قطب الدین ، شکاگو

 

 

،امریکہ کے شکاگو میں انڈین کونسلیٹ کے سامنے  مسلمانوں نے گستاخ رسول ﷺ کے خلاف ڈاؤن ڈاؤن کے نعرے لگاتے ہوئے غم اور غصہ کا اظہار کیا۔ اس احتجاج میں مسلم  تنظیموں نے بڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔ اس میں یونائیٹڈ مسلمس آف شکاگو Justic for All اور تمام تنظیمیں شامل تھیں ۔ اس احتجاج کو مخاطب کرتے ہوئے ڈاکٹر کہ قطب الدین نے کہا کہ مسلمان ہر چیز کو برداشت کر سکتے ہیں ۔ مگر شان رسالت  میں ہرگز برداشت نہیں کر سکتے۔ محمد ہمارا دین اور ہمارا ایمان ہے  میں محمد ﷺ کی اطاعت ان سے محبت اور وفاداری ایمان کی روح ہے۔

انہوں نے علامہ اقبال کے ایک شعر

 

کی محمد سے وفا تو نے تو ہم تارے ہیں

یہ جہاں چیز ہے کیا لوح وقلم تیرے ہیں

We love Mohammed (Peace be upon him) پورا علاقہ کلمہ طیبہ لا الہ الا اللہ کہ رسول اللہ اور لبیک یارسول اللہ کے نعروں سے گونج رہا تھا۔ اس احتجاج میں بچے ، بوڑھے نو جوان عورت مرد سب شامل تھے ۔ اس میں غیر مسلموں کی بھی کافی تعداد تھی ۔ اس جلسے کومخاطب کرتے ہوئے Justic for All کے صدر جناب مجاہد ملک نے کہا کہ ہم نبی کی حرمت میں گستانی  برداشت نہیں کرتے بلکہ خاطیوں کو کیفرکردار تک پہنچانے کا مطالبہ کرتے ہیں ۔ انہوں نے مسلمانوں کو جاگتے اور بیدار رہنے کا مشورہ دیا۔ جناب عبداللہ نیل (Abdullah Mutchell CEO ) نے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ مسلمان دین پر قائم رہیں اور ناموس رسالت اور اسلام کی حفاظت کے لئے ان تھک کوشش کر یں ۔ جناب شاہنواز خاں نے کہا کہ ایسے وقت میں اپنے شعور کو بیدار کر یں ۔ اور اپنے ضمیر کو جنجھوڑ یں اور دین کے لئے اپنی تمام توانائیوں کو استعمال کریں صرف مذمت اور مظاہروں سے کام نہیں چلے گا۔ جناب ارشاد خاں نے مظاہرین کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ہم کو للکارا گیا ہے ہمارے لئے نبی کی ذات ہی سب کچھ ہے ۔ انہوں نے مذید کہا کہ مسلمان جہاں بھی ہوں وہ اپنی دینی حمیت کے ساتھ رسول سے وفاداری کا ثبوت دیں ۔ اسی طرح مختلف مقررین نے اپنے خطابات میں عظمت رسول اور مقام رسول کی حفاظت کے لئے جد و جہد کر نے پر زور دیا۔ خواتین مقررین نے بھی اس موقع پر اپنے ایمان اور دینی حمیت کا ثبوت دیتے ہوئے عظمت رسول اللہﷺ کے لئے ہر طرح کی قربانی پر زور دیا۔

آخر میں حکومت ہند سے یہ مطالبہ کیا گیا کہ و و خاطیوں کو جلد سے جلد سخت سزادے اور پی ایم نریندرمودی اس اہم معاملہ پر قوم کو اعتماد میں لیں ۔ عوام ان کی خاموشی کو خاطیوں کی پشت پناہی تصور کر رہے ہیں۔ اگر ان سے یہ نہیں ہوسکتا ہے تو وہ فوری استعفی دیں ۔ آخر میں امریکی حکومت سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ ہندوستان پر اپنا اثر ورسوخ استعمال کرتے ہوئے ہندوستانی مسلمانوں کی جان و مال کی تباہی اور انڈیا میں human Right Violation کو روکیں ۔کے حوالے سے مزید کہا کہ اب وقت کیا ہے کہ ہم اپنے رسول سے وفاداری کا واح ثبوت پیش کر یں۔ احتجاجی مظاہرین ہاتھوں میں پلے کارڈز اٹھائے ہوئے تھے ۔ جس میں لکھا ہوا تھا۔ یامحمد ہم حاضر ہیں، ہم حاضر ہیں ۔ اور لبیک یا رسول اللہ لبیک ۔

Punish the Culprit who insulted our Prophet (Sallahu Alaihi wasallam)

آخر میں مظاہرین نے عشق رسول اور محبت نبی کا اظہار کیا۔ اور وعدہ کیا کہ اے محمد ہم آپ کی امت ہیں ہم حاضر ہیں ۔ اس کے بعد دعا ہوئی ۔ اس موقع پر ڈاکٹر ظہیر ودیگر نے بھی خطاب کیا ۔

متعلقہ خبریں

Back to top button