این آر آئی

دوسرے ممالک سے آنے والے مسافروں کو آج سے کورنٹائن سنٹر میں رہنے کی ضرورت نہیں

نئی دہلی _ مرکزی حکومت نے بین الاقوامی مسافروں کی آمد سے متعلق نظرثانی شدہ رہنما ہدایات جاری کی ہیں،جن کا اطلاق آج 22 جنوری سے ہوگا۔ رہنماہدایات میں بین الاقوامی مسافروں اور ایئر لائنز اور تمام داخلہ پوائنٹس کیلئے ضابطے مرتب کئے گئے ہیں۔ ان ہدایات کے مطابق، کووڈ کے خطرے والے ممالک سے آنے والے مسافر اگر بھارت آنے پر کووڈ سے متاثر پائے گئے تو ان کا معیاری ضابطے کے مطابق علاج کیاجائے گا یا الگ تھلگ رکھاجائے گا اور انہیں لازمی طور پر کورنٹائن سنٹر میں نہیں رکھا جائے گا۔ پہلے کی رہنما ہدایات کے مطابق انفیکشن سے متاثر پائے جانے والے مسافروں کو پروٹوکول کے مطابق کورنٹائن سنٹر میں رہنا لازمی تھا۔
کووڈ کے زیادہ خطرے والے ممالک سے آنے والے مسافروں کو اپنی منسلک پرواز پر سوار ہونے سے پہلے آمد کے بعد کووڈ 19 ٹسٹ کیلئے سیمپل دینا ہوگا اور ٹسٹ کا نتیجہ آنے تک انہیں ایئرپورٹ پر ہی انتظار کرنا ہوگا۔
دیگر ممالک سے آنے والے مسافروں میں سے دوفیصد کا ہوائی اڈے  پر ٹسٹ کیاجائے گا۔ ان دو فیصد مسافروں کی نشاندہی متعلقہ ایئرلائنز کریں گی۔رپورٹ منفی پائے جانے کی صورت میں ان دوفیصد سمیت تمام مسافروں کو سات دن تک گھر میں کورنٹائن میں رہنا ہوگا اور آٹھویں دن RT-PCR ٹسٹ کرانا ہوگا۔یہ ٹسٹ بھی منفی آنے کے بعد انہیں مزید اگلے سات دن تک اپنی صحت پر نگاہ رکھنی ہوگی اور اگر ایسے مسافر انفیکشن سے متاثرپائے گئے تو ان کے نمونے Genomic Testing کیلئے بھیجے جائیں گے۔اس کے علاوہ دیگر رہنما ہدایات پہلے کی طرح ہی ہیں

متعلقہ خبریں

Back to top button