نیشنل

پنجاب میں وزیراعظم کے قافلہ کے سامنے احتجاج، قریب 20 منٹ تک رکنا پڑا۔ دورہ منسوخ

نئی دہلی: وزیراعظم نریندرمودی کا قافلہ آج اس وقت 20 منٹ تک فلائی اووربرج پررک گیا جب پنجاب میں احتجاجیوں نے راستہ روک دیا جس کی وجہہ سے انھیں اپنا دورہ منسوخ کرنا پڑا۔ مرکزی وزارت داخلہ نے اس واقعہ پرسخت برہمی ظاہرکی ہے اورکہا ہے کہ پنجاب حکومت کی لاپرواہی کی وجہہ سے اس طرح کا واقعہ پیش آیا۔

وزیراعظم آج پنجاب کے فیروز پور میں ریالی سے خطاب کرنے والے تھے، وہ شہدا کی یادگار کے دورہ کیلئے بھٹنڈا روانہ ہوئے، وہ ہیلی کاپٹرکے ذریعہ وہاں پہنچنے والے تھے لیکن موسم سازگارنہ ہونے کی وجہہ سے انھیں سڑک کے ذریعہ سفرکرنا پڑا۔ اس کی اطلاع پنجاب ڈی جی پی کو دے دی گئی اوراس کے بعد وزیراعظم کا قافلہ سڑک کے راستہ سے روانہ ہوا۔ اس سڑک پرسیکوریٹی انتظامات کئے گئے تھے۔ ان کا قافلہ جیسے ہی فلائی اووربرج پرپہنچا بعض احتجاجیوں نے راستہ روک دیا جس کی وجہہ سے قریب  اپنے دورے سےچند گھنٹے قبل انہوں نے ایک ٹوئٹ میں کہا تھا کہ وہ آج پنجاب کی بہنوں اور بھائیوں کے درمیان پہنچنے کے منتظر ہیں۔

ان کے دورہ کی تفصیلات کے مطابق مودی فیروز پور پہنچنے کے بعد وہاں سے دس کلو میٹردورحسینی والا میں شہید بھگت سنگھ، راج گرو اور سکھ دیو کو خراجِ عقیدت پیش کرنے والے تھے۔ پندرہ تا 20 منٹ انھیں رکنا پڑا، غیرمتوقع احتجاج کی وجہہ سے مودی کو اپنا دورہ منسوخ کرکے واپس ہونا پڑا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button