جنرل نیوز

صفا بیت المال اور ٹاٹا کے اشتراک سے سلم علاقوں میں خواندگی پروگرام۔ ناخواندہ افراد کو خواندہ بنانے کے لیے ایک سو سنٹرس کا قیام

حیدرآباد:تعلیم ہی وہ سہارا ہے جس کے ذریعہ ہم دنیا میں آگے بڑھ سکتے ہیں اور ترقی پاسکتے ہیں۔ انسان کی بنیادی ضرورت یہ ہے کہ اس کو لکھنا پڑھنا آجائے۔ ہندوستان میں تقریبا ًتیس کروڑ افراد اَن پڑھ ہیں اور کسی بھی ملک کے لیے اتنی بڑی تعداد کا ناخواندہ ہونا نہ صرف عیب کی بات ہے بلکہ یہ خطرہ کی بھی بات ہے۔ دو زبانیں ہر زمانہ میں اور ہر علاقہ کے لیے اہم ہوتی ہیں، مادری اور علاقائی زبان۔ اس لیے چاہے اردو ہو یا تلگو لوگ اپنی مادری زبان میں اپنے گھروں میں بات کریں اور اردو اور تلگو دونوں زبانوں کے لکھنے اور پڑھنے کی کوشش کریں۔ ان خیالات کا اظہارصفا بیت المال اور ٹاٹا کے اشتراک سے کوہِ نور فنکشن ہال بابا نگر میں منعقدہ خواندگی پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے ذمہ داران نے کیا۔یوم عالمی خواندگی کی مناسبت سے آج ہی سے عملی طور پر اس پروگرام کا آغاز کیا گیا ہے۔ یہ تین ماہ کا کورس ہوگا۔شہر حیدرآبادکے مختلف علاقوں میں ایک سو سنٹر قائم کیے جائیں گے، جس میں تقریباً پانچ ہزار مرد و خواتین حصہ لیں گے۔ اس پروگرام کے لیے ایک سو معلمات کا تقرر کیا جارہا ہے۔ اگر ذمہ دار احباب اپنے اپنے علاقہ میں سنٹرس قائم کرنا چاہتے ہوں، نیز جو ان کلاسس سے استفادہ کرنا چاہتے ہوں وہ سیل نمبرات 9394419821, 9394419820 پر ربط کریں۔ جناب میر عظمت علی صاحب ٹی سی ایس، سی ایس آر ہیڈ نے اس پروگرام سے متعلق بنیادی اہم باتیں بیان کیں۔جناب آننت مری گنتی حیدرآباد اربن لیب صاحب، مولانا فصیح الدین ندوی صاحب، مولانا غیاث احمد رشادی، مولانا محمد مصدق القاسمی صاحب، مولانا وسیم الحق ندوی، جناب فیروز صاحب رکن شوریٰ صفا بیت المال، مولانا حبیب الرحمن حسامی صاحب نمائندہ صفا بیت المال، جناب عبد القدوس صاحب اے پی پی وغیرہ نے شرکت کی اور اس پروگرام کو خوب سراہا۔صفا بیت المال کے ذمہ داران نے ٹاٹا گروپ کا بھی شکریہ ادا کیا۔اس پروگرام میں ہندو اور مسلم مرد و خواتین کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ مفتی عبد المہیمن اظہر القاسمی نائب صدر صفا بیت المال نے نظامت کے فرائض انجام دئیے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button