نیشنل

شادی‌کے 6 ماہ بعد خاتون نے دیا بچے کو جنم

Photo imagine

شادی‌کے 6  ماہ بعد خاتون نے دیا بچے کو جنم

نئی دہلی:شادی کے چھ ماہ بعد ایک خاتون نے بچے کو جنم دیا جس پر اس کے سسرالی رشتہ داروں نے کردار پر شک کرتے ہوئے اسے گھر سے نکال دیا اور طلاق کے لیے دباؤ ڈالنے لگے، خاتون نے عدالت سے رجوع ہوکر جو حقیقت بتائی اسے سن کر سب چونک گئے۔

یہ واقعہ ریاست مدھیہ پردیش کے گوالیار کا ہے۔ مقامی للیتا اور سنیل کی مئی کے اواخر میں شادی ہوئی اور خاتون نے دسمبر میں ایک بچے کو جنم دیا، شادی کے 6 ماہ بعد بچہ ہونے پر سسرالی رشتہ دار یہ کہتے ہوئے اسے طعنے دے رہے تھے کہ یہ بچہ سنیل کا نہیں ہے اور خاتون کو اس کے ماں باپ کےگھر بھیج دیا گیا، طلاق کا نوٹس روانہ کیا گیا، خاتون کے رابطہ قائم کرنے پر سنیل نے بھی صاف کہہ دیا کہ وہ اس بچے کا باپ نہیں ہے۔ پولیس نے ان کی کونسلنگ کی خاتون نے بتایا کہ شادی سے پہلے ہی ان‌ دونوں کے درمیان ‌تعلقات قائم ہوگئے تھے اور اس بات کو جانتے ہوئے ہی جلدی‌شادی‌کی گئی۔

عدالت نے کہا کہ بچے کا ڈی این اے ٹیسٹ کروایا‌جائے گا اور بچہ اس کا ہونے کی تصدیق پر اسے جیل بھیج دیا جائے گا۔ سنیل نے قبول کرلیا کہ بچہ اسکا ہی ہے اور سسرالی رشتے دار خاتون کو بچے کے ساتھ گھر واپس لے گئے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button