دو خاتون ڈاکٹرس نے کیا آپس میں شادی کا فیصلہ۔ دھوم دھام سے ہوئی منگنی

ناگپور: حیدرآباد میں حال ہی میں دو نوجوانوں کی آپس کی شادی کے واقعہ کے بعد اب تازہ طورپرریاست مہاراشٹرا کے ناگپورمیں دو خاتون نے آپس میں منگنی کرلی ہے۔ سرابھی مترا اورپرومتی مکھرجی نامی دوخواتین پیشہ سے ڈاکٹربتائی گئی ہیں، وہ دونوں بچپن سے ہی ایک دوسرے کے کافی قریب تھیں اوران کے درمیان تعلقات قائم ہوگئے۔

حالانکہ ان کے گھروالے ان دونوں کے رشتہ کے خلاف تھے اورانھوں نے برہمی کا اظہارکیا تاہم دونوں خواتین ساتھ رہنے لگیں اورآپس میں شادی کا فیصلہ کیا۔ گھروالوں نے سمجھانے کی کوشش کی تاہم وہ ناکام رہے اوران کی بات ماننے کیلئے مجبور ہونا پڑا پھر ان دونوں کی دھوم دھام سے منگنی ہوئی۔

واضح رہے کہ تلنگانہ میں دو مردوں نے گذشتہ ماہ گھروالوں کی مرضی سے آپس میں شادی کرلی تھی، ریاست میں ہم جنس پرستوں کی یہ پہلی شادی تھی۔ یہ شادی دوست احباب اوررشتہ داروں کی موجودگی میں حیدرآباد کے وقارآباد ہائی وے پرواقع ایک ریسارٹ میں انجام پائی۔ حالانکہ ان دونوں کا تعلق مختلف ریاستوں سے بتایا گیا ہے کہ لیکن اس وقت حیدرآباد میں مقیم سپریو اورابھئے کی ملاقات سال 2013 میں ڈیٹنگ سائٹ پرہوئی تھی جس کے بعد ان دونوں کی دوستی محبت میں بدل گئی۔ وہ گزشتہ 8 سال سے ایک دوسرے کی محبت میں گرفتارتھے آورآخرکارانھوں نے شادی کرلی۔