پولیس نے میرے بیٹے کو ہلاک کیا : راجو کی ماں کا الزام

ورنگل _ حیدرآباد کی سنگارینی کالونی میں 6سالہ معصوم لڑکی کی عصمت ریزی کے ملزم راجو کے مکان کو مقامی افراد نے نقصان پہنچایا۔راجو کی خودکشی کے واقعہ کی اطلاع کے ساتھ ہی کالونی کے برہم افراد نے اس کے مکان کے قریب جمع ہوکر اس کے مکان کو نقصان پہنچایااور کہا کہ کوئی بھی راجو کے خاندان کو پُرسہ نہ دے

 

۔اسی دوران راجو کی ماں نے آندھراجیوتی نیوز سے بات چیت کرتے ہوئے الزام لگایا کہ پولیس نے اس کے بیٹے کو ہلاک کیا ہے۔بیٹے کی موت کی اطلاع پر ماں غم سے نڈھال ہوگئی۔ اس نے الزام لگایا کہ پولیس نے راجو کا قتل کرنے کے بعد لاش کو ریلوے ٹریک پر پھینک دیا۔اس واقعہ کی اطلاع راجو کے ارکان خاندان کو پڑوسیوں سے ملی۔

راجو کی بیوی مونیکا نے کہا کہ اس کے خاندان کا اب کوئی پرسان حال نہیں ہے۔اس نے التجا کی کہ راجو کی لاش کو افراد خاندان کے حوالے کیا جائے۔اس نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے پولیس پر راجو کے قتل کا شبہ ظاہر کیا اور کہا کہ پولیس نے راجو کا کسی اور مقام پر قتل کرنے کے بعد لاش کو ریلوے ٹریک پر پھینک دیا۔ مونیکا نے کہا کہ راجو کبھی خودکشی نہیں کرسکتا تھا اور وہ غلط نہیں تھا اس پر کمسن لڑکی کے ساتھ عصمت دری اور قتل کا الزام لگایا گیا تھا۔ مونیکا نے کہا کہ اگر راجو نے کچھ غلط کیا ہے تو اسے قانونی طور پر مجرم ثابت کرتے ہوئے قانون کے دائرہ میں سزا دی جانی چاہئے تھی۔