تلنگانہ میں گزشتہ سال 877 کروڑ روپے کے ٹریفک چالانات _ سب سے زیادہ چالانات ہیلمٹ نہ پہننے پر عائد

حیدرآباد _5 جنوری ( اردو لیکس) تلنگانہ حکومت نے گزشتہ چار سال میں گاڑیوں پر 2,220 کروڑ روپے کی رقم بطور چالانات عائد کئے ہیں  اس سلسلہ میں ریاست بھر میں چار سال کے دوران مختلف اقسام کی گاڑیوں کے خلاف 6  کروڑ 18 لاکھ  کیس درج کیے گئے۔

گزشتہ سال 2,22,55,363 مقدمات درج کیے گئے اور 877 کروڑ روپے کے جرمانے بطور چالانات عائد کیے گئے۔ ہیلمٹ نہ لگانے، شراب پی کر گاڑی ، اوور اسپیڈنگ چلانے جیسے  18 زمروں کے تحت ریاست میں ٹریفک پولیس  مقدمات درج کرریے ہیں ۔ ٹریفک پولیس اور  لاء اینڈ آرڈر پولیس مل کر  خصوصی مہم چلا رہے ہیں

پولیس کی جانب سے ہیلمٹ نہ  پہننے، سگنل جمپنگ، اسٹاپ لائن کراسنگ، موبائل فون ڈرائیونگ، غلط سائیڈ ڈرائیونگ، ٹرپل سواری، اوور اسپیڈنگ، راش ڈرائیونگ، سیٹ بیلٹ اور بغیر لائسنس گاڑی چلانے والوں کے خلاف مقدمات درج کیے جا رہے ہیں ۔ اس میں ہر سال سب سے زیادہ چالانات ہیلمٹ کی خلاف ورزیوں کی  ہیں۔ تیز رفتار گاڑی چلانے کے چالانات دوسرے نمبر پر اور ٹرپل سواری کے چالانات تیسرے نمبر پر ہیں۔ اس طرح کے چالانوں کا ڈیٹا TS پولیس کی ویب سائٹس اور TS cop کے ٹیب میں ڈالا جا رہا ہے۔ ٹریفک انفورسمنٹ (وہیکل چیکنگ) کے دوران زیر التواء چالان والی گاڑیوں کو ضبط کیا جا رہا ہے۔ چالان کی کم از کم نصف رقم کی ادائیگی تک گاڑیاں نہیں چھوڑی جائیں رہی ہیں