واٹس ایپ نے ایک ماہ میں 20 لاکھ ہندوستانیوں کے اکاؤنٹس پر پابندی لگا دی

مشہور میسجنگ ایپ واٹس ایپ نے گزشتہ  اگست میں تقریبا 20 لاکھ ہندوستانیوں کے اکاؤنٹس پر پابندی عائد کر دی ہے ۔ کمپنی نے کہا کہ اس نے نئے آئی ٹی رولز 2021 کے تحت اکاؤنٹس پر پابندی لگا دی ہے۔ واٹس ایپ چاٹ کے ذریعہ  غیر اخلاقی کام کرنے اور قابل اعتراض مواد بھیجنے والوں کے اکاؤنٹس پر پابندی لگا دی ہے  جو دوسروں کو نقصان پہنچاتے ہیں

پچھلے اگست میں 20،70،000 اکاؤنٹس پر پابندی لگا دی گئی۔اس میں سے 222 اکاؤنٹ صارفین نے اکاونٹ بحال کرنے کی دوبارہ اپیل کی۔ کمپنی نے یہ بھی کہا کہ اسے کچھ شکایات پر پابندی کے خلاف انڈیا شکایتی افسر سے اپیل موصول ہوئی ہے۔
صارفین کی متعدد شکایات کی بنیاد اور   واٹس ایپ کے ایک ٹول کی بنیاد پر متعلقہ اکاؤنٹس کی شناخت کیا جاتا ہے۔ ٹول متعلقہ اکاؤنٹ کا تجزیہ کرتا ہے جب صارف اس کا غلط استعمال کرتا ہے

پچھلے جولائی میں دنیا بھر میں واٹس ایپ کی جانب سے جن اکاونٹس پر پابندی لگائی گئی تھی ان میں سے تقریبا 25فیصد اکاؤنٹس ہندوستان سے تھے۔ واٹس ایپ کے مطابق ہر ماہ دنیا بھر میں تقریبا 80  لاکھ اکاؤنٹس پر پابندی لگائی جاتی ہے جن میں سے تقریبا 20  لاکھ ہندوستان سے، ہوتے  ہیں۔

16 جون سے 31 جولائی تک ، واٹس ایپ نے 3،027،000 اکاؤنٹس پر پابندی لگا دی ، جن میں سے 15 مئی اور 15 جون کے درمیان 2،011،000 اکاؤنٹس پر پابندی عائد کی گئی۔