انٹر نیشنل

افغانستان میں سخت شرعی قانون نافذ کرنے طالبان کا اعلان

نئی دہلی: افغان دارالحکومت کابل پرکنٹرول کرنے کے بعد طالبان نے کہا کہ جنگ ختم ہوچکی ہے اور ملک کے لوگوں کی زندگی بہتر بنانے کی کوشش کی جائے گی۔ طالبان کے نائب رہنما ملا عبدالغنی برادر نے اعلان کیا ہے کہ جنگ کے خاتمے کے بعد اب طالبان ملک کے لوگوں کی زندگی کو بہتر بنانے کی کوشش کریں گے۔ طالبان نے یہ بھی کہا ہے کہ وہ ملک میں سخت شرعی قانون نافذ کرے گا اور افغانستان کے اسلامی امارت کے نام کا اعلان کیا ہے۔ طالبان کے مذاکرات کار سہیل شاہین نے کہا ہے کہ انہوں نے اپنے مجاہدین کو حکم دیا ہے کہ وہ بغیر اجازت لوگوں کے گھروں میں داخل نہ ہوں۔ ملا برادر نے کہا کہ ہم اہل وطن کو بہتر زندگی فراہم کریں گے اور ملک کی سلامتی اور خوشحالی کے لیے کام کیا جائے گا۔ ملا برادر کا یہ بیان ایک ایسے وقت میں آیا ہے جب طالبان کے افغانستان پر قبضے کے بعد بیشتر ممالک اپنے سفارتکاروں اور عملے کو نکالنے کی کوشش کر رہے ہیں۔طالبان کا کابل پر کنٹرول سنبھالنے کے بعد صدر اشرف غنی ملک چھوڑ چکے ہیں اور مزید ہزاروں افغان شہری بھی ملک سے باہر نکلنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

متعلقہ خبریں

Back to top button