عادل آباد بلدیہ کے دو مجلسی کونسلرس کی ٹی آر ایس پارٹی میں شمولیت

عادل آباد _ چیف منسٹر کے چندرشیکھرراؤ کی دور اندیشی اور ٹی آر ایس پارٹی کی دن بدن بڑھتی ہوئی مقبولیت کو دیکھتے ہوئے مختلف پارٹیوں سے وابستہ افراد ٹی آر ایس پارٹی میں شمولیت اختیار کررہے ہیں۔ان خیالات کا اظہار سابق ریاستی وزیر و رکن اسمبلی عادل آباد مسٹر جوگورامنا نے اپنے کیمپ آفس میں عادل آباد میونسپلٹی کے وارڈ نمبر 15 اور 16 کے دو مجلسی کونسلرس شاہدہ شیخ زوجہ قاضی سلیم الدین اور سنگیتا ونجارے زوجہ سواگت ونجارے کی ٹی آر ایس پارٹی میں شمولیت کی تقریب کے موقع پر میڈیا نمائندوں سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر رکن اسمبلی جوگورامنا کے ہاتھوں دو مجلسی کونسلرس نے ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کی۔جوگورامنا نے پارٹی کھنڈوا پہناکر خیر مقدم کیا۔بعد ازاں میڈیا سے بات کرتے ہوئے رکن اسمبلی نے مزید بتایا کہ ٹی آر ایس پارٹی مختلف پارٹیوں کے کونسلرس کے وارڈوں میں بھی یکساں سلوک کرتے ہوئے ترقیاتی کاموں کو انجام دیرہی ہے۔عادل آباد کے وارڈ نمبر 15 اور 16 میں مجلسی کونسلرس ہونے کے باوجود بھی ٹی آر ایس پارٹی کی اسکیمات سے یہاں کی عوام کو استفادہ کرنے کی سہولیات فراہم کی گئی اور لاکھوں روپیوں کی لاگت سے ترقیاتی کاموں کو بھی انجام دیا گیا۔جبکہ اب باضابطہ انہوں نے ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرتے ہوئے فیملی ممبر بن گئے ہیں۔میں وعدہ کرتاہوں کے عوام کو درپیش بنیادی مسائل کو حل کیا جائے گا۔اور 26 جولائی کو نئے راشن کارڈس اور 57 سال عمر رکھنے والے افراد کے لیے وظائف اور ضرورت مندوں کو ڈبل بیڈروم مکانات دینے کے اقدامات کیے جائیں گے۔اس موقع پر میونسپل وائس چیئرمین ظہیر رمضانی،ٹی آر ایس قائدین ساجد الدین،اشرف اور دیگر موجود تھے۔

بتایا جاتا ہے کہ عادل آباد بلدیہ میں مجلس کے 5 کونسلرس منتخب ہوئے تھے اور حالیہ دنوں عام آدمی پارٹی کے ایک کونسلر اور ایک آزاد کونسلر مجلس میں شامل ہوئے تھے جس کے بعد بلدیہ میں مجلس کے اراکین کی تعداد 7 ہوگئی تھی لیکن آج   دو کونسلرس کی ٹی آر ایس پارٹی میں شمولیت کے بعد ان کی تعداد 5 ہوگئی ہے اس کے علاوہ مجلس کا ایک کوآپشن ممبر بھی ہے