تلنگانہ

حیدرآباد فائرنگ میں ہلاک نوجوان کا ورنگل ضلع سے تعلق

حیدرآباد: 17 جون ( اردولیکس) اگنی پتھ اسکیم کے خلاف منظم کردہ احتجاج میں سکندرآباد ریلوے اسٹیشن میں احتجاجیوں کو قابو کرنے کے لیے ریلوے پولیس کی فائرنگ  میں ایک شخص کی موت ہوگئی اور دیگر 8 زخمی ہوگئے۔

مرنے والا تعلق تلنگانہ کے ورنگل ضلع سے بتایا گیا ہے ورنگل کا  نوجوان  سکندرآباد ریلوے اسٹیشن پر آر پی ایف کی فائرنگ میں ہلاک ہوگیا۔ پولیس نے اس کی شناخت راکیش کے طور پر کی ہے جو کہ خانہ پور منڈل کے دبیر پیٹ کا ساکن ہے۔ پولیس نے اس کی اطلاع ریلوے حکام کو دی

گورنمنٹ ریلوے پولیس نے پہلے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے لاٹھی چارج اور طاقت کا استعمال کیا اور فائرنگ کرنے کا انتباہ دیا گیا تھا۔ بعد ازاں صورتحال کو قابو میں آتا نہ دیکھ کراعلیٰ حکام کی ہدایات پر ریلوے پولیس نے تقریباً 15 راؤنڈ فائر کئے جس سے ایک شخص زخمی ہوا۔ اسے فوری طور پر علاج کے لیے اسپتال منتقل کیا گیا جہاں اسے مردہ قراردیا گیا۔ پتھراؤ میں دو پولیس کانسٹیبل بھی زخمی ہوئے۔ ریلوے کے ڈی جی سندیپ شنڈالیا کے علاوہ دیگر اعلیٰ حکام موقع پر پہنچ گئے ۔

 

سکندرآباد ریلوے اسٹیشن میں اس وقت کشیدگی پھیل گئی جب کئی نوجوانوں نے مرکزی حکومت کی مسلح افواج میں بھرتی اسکیم ’اگنی پتھ‘ کے خلاف احتجاج کیا۔ سینکڑوں احتجاجیوں نے ریلوے پٹریوں اور پلیٹ فارمس میں گھس کرکھانے پینے کے اسٹالز، سامان کو نقصان پہنچا اور تین ٹرینوں کو جزوی طور پر نذر آتش کر دیا۔ چند ٹووہیلرس کو بھی آگ لگا دی گئی۔ اس کے علاوہ سگنلنگ سسٹم کو نقصان پہنچا اور ریلوے کی دیگر املاک کو نقصان پہنچا

تینوں افواج میں فوجی بھرتی کے لیے مرکز کی طرف سے لائی گئی اگری پتھ اسکیم کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کچھ نوجوانوں نے سکندرآباد اسٹیشن پر دھرنا دیا۔ ٹرینوں کو جلا دیا گیا۔ پتھروں سے حملہ کیا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button