ریاستی اردو اکیڈیمی کے ڈائر کٹر و سیکرٹری ڈاکٹر محمد غوث سے آل انڈیا اسمال اینڈ میڈیم نیوز پیپرس تلنگانہ کے وفد کی نمائندگی

حیدرآباد ( راست): اردو کے فرو غ و ارتقا ء میں ہر اردو بولنے والے کو اپنا حصہ ادا کرنا چاہیے۔ اب تو اردو میں نیٹ اور آئی اے ایس اور آئی پی ایس جیسے مسابقتی امتحانات بھی اردو میں لکھنے کی اجا ز ت ہے ۔اردو لکھنے اور پڑھنے والو ں کو جدید ٹکنا لوجی سے واقفیت وقت کی ضرور ت ہے ۔ اس مقصد کو تقویت پہنچا نے کے لے ریاستی اردو اکیڈیمی کے ڈائر کٹر و سیکرٹری ڈاکٹر محمد غوث اور ان کا اسٹاف دن رات کوشاں ہیں ۔حتیٰ کہ کووڈ۔19وباء کے دوران بھی اردو کی اشاعت کے لئے (35) سے زیادہ آن لائین پروگرام عمل میں لائے گئے ہیں ۔ جیسے آن لائین اردو بنیادی کورس‘ ڈگری کی نصابی کتب کی تیاری ‘ ویب سائٹ کا آغاز ‘ بچوں کا رسالہ ’’ روشن ستارے ‘‘ کی باقاعدہ اشاعت ‘ عصر حاضر میں اردو زبان و ادب کا فروغ ‘ مسائل و مشکلات‘ صحافیوں کی تربیت کے لئے آن لائین ورکشاپ ‘ اکیڈیمی کا ترانہ‘ اردو کے مصنفین‘ شعرا‘ ادبا‘ اور صحافیوں کی مطبوعہ تخلیقات پر 2017ء تک انعام دئیے جاچکے ہیں ۔اس علاوہ اردو کی اشاعت و ترویج کے لئے کئی منصوبے پائپ لائین میں ہیں جیسے اردو کیلی گرافی اور اردو ترجمہ کا مختصر مدتی کورس وغیرہ۔ جس کے لئے وہ قابل مبارک باد ہیں

 

۔آل انڈیا اسمال اینڈ میڈیم نیوز پیپرس فیڈ ریشن نئی دہلی ‘ تلنگانہ یونٹ کے صدر جناب انور علی خان نے اردو اکیڈیمی کے کارناموں کی ستائش کی ۔ انہو ں نے کہا کہ اردو اکیڈیمی کے اسکیمات میں چھوٹے اور متوسط اخبارات و رسائل کو اشتہارات اور سالانہ گرانٹ دینا بھی شامل ہے ۔لیکن گذشتہ تین سال سے بجٹ کی کمی کے باعث نہ تو اشتہار دیا گیا اور نہ ہی سالانہ گرانٹ دی گئی ۔ جب کہ کووڈ ۔19 وباء کے بعد سے اردو صحافت کئی مسائل اور مشکلات سے دوچار ہے

 

۔ اس موقع پر ڈائر کٹر و سیکرٹری ڈاکٹر محمد غوث اور سپرنٹنڈنٹ وی کرشنا کی شال پوشی کرکے گلدستے پیش کئے گئے ۔ فیڈریشن کے اس وفد میں ڈاکٹر محبوب فرید ‘ایڈیٹر ما ہنامہ شادا ب انڈیا ‘ جناب محمد یوسف ناصر ٹائمس ‘ جناب سید اعزا ز احمد ہفتہ روزہ پر واز ِشاہین ‘ جناب سید عارف ہند کا سورج‘ جناب سراج الدین نیشن بلڈروغیرہ شامل تھے ۔ بعد ازاں فیڈریشن کے اراکین نے اردو اکیڈیمی کے نمائند ہ رسالے قومی زبان اور بچو ں کے رسالے ’’ روشن ستارے ‘‘ کے ذمہ داروں سے ملاقات کی اور ان کی ستا ئش کی ۔