تلنگانہ

دہلی پولیس کی جانب سے بیرسٹر اویسی کے خلاف ایف آئی آر _ ایف آئی آر پر صدر مجلس کا ردعمل

نئی دہلی _ 9 جون ( اردولیکس) صدر مجلس و رکن پارلیمنٹ حیدرآباد بیرسٹر اسدالدین اویسی سمیت کئی شخصیات کے خلاف  مبینہ اشتعال انگیز تقاریر پر دہلی پولیس نے  ایف آئی آر درج کی ہے۔ ایف آئی آر میں سوامی یاتی نرسنگھنند، صحافی صبا نقوی ،مفتی ندیم  اور دیگر کا نام بھی درج کیا گیا ہے۔ یہ ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب بی جے پی کی معطل ترجمان نوپور شرما کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے بارے میں تبصرے پر تنازعہ ہوا ہے، جس سے عالمی سطح پر غم و غصہ پایا جاتا ہے۔

دہلی پولیس نے ایک ایف آئی آر میں نوپور شرما کو بھی شامل کیا ہے، جب کہ دوسرے ایف آئی آر میں بیرسٹر اسدالدین اویسی، بی جے پی کے برطرف شدہ لیڈر نوین جندال اور صحافی صبا نقوی سمیت کئی لوگوں کو شامل کیا گیا ہے ۔دہلی پولیس نے دو ایف آئی آر درج کی ہیں – ایک نوپور شرما کے خلاف اور دوسری ان لوگوں کے خلاف جن پر مسلسل متنازعہ بیانات دینے کا الزام  ہے

اسی دوران بیرسٹر اویسی نے سلسلہ وار ٹویٹس میں اس کا اسکرین شاٹ شیئر کیا جس میں انہوں نے دعویٰ کیا کہ وہ دہلی پولیس ایف آئی آر کی کاپی ہے۔ حیدرآباد کے رکن پارلیمنٹ نے کہا کہ ایف آئی آر میں یہ نہیں بتایا گیا کہ ان کے خلاف کس جرم کا مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button