تلنگانہ

حیدرآباد نمائش کو بھی بند کردیا گیا _ اتوار کی رات حکومت کا اچانک فیصلہ

حیدرآباد نمائش کو بھی بند کردیا گیا _ اتوار کی رات حکومت کا اچانک فیصلہ

حیدرآباد _ 3 دسمبر ( اردو لیکس) حیدرآباد کے نامپلی میں جاری کل ہند صنعتی نمائش کو اس کے افتتاح کے دوسرے ہی دن بند کردیا گیا۔ حکومت نے ریاست میں کورونا وائرس کے کیسوں میں اضافہ کے پیش نظر 10 جنوری تک عوامی ،مذہبی اور سیاسی اجتماعات پر پابندی عائد کردی ہے تاہم نمائش کے سلسلہ میں کوئی فیصلہ نہیں کیا تھا  عوامی گوشوں اور سیاسی جماعتوں کی جانب سے نمائش کو کھلے رکھنے کی اجازت دینے اور دیگر عوامی اجتماعات پر پابندی عائد کرنے پر حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا تھا اس سلسلہ میں اردو لیکس ویب سائٹ پر بھی اتوار کے روز ایک خبر جاری ہوئی تھی

 

جس کے بعد حکومت نے نمائش کو  بھی 10 جنوری تک بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ سکریٹری نمائش سوسائیٹی آدتیہ مارگم نے بتایا کہ نمائش کا یکم جنوری کو گورنر نے افتتاح کیا تھا ۔ تاہم اتوار کو دوسرے دن پولیس کی ہدایت پر اسے 10 جنوری تک معطل کردیا گیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ حکومت کے جی او ایم ایس نمبر 1 مورخہ یکم جنوری پر عمل آوری کے سلسلہ میں محکمہ پولیس سے ہدایات موصول ہوئی تھیں۔ ان ہدایات کے پیش نظر نمائش کو فی الحال 10 جنوری تک کیلئے معطل کردیا گیا ہے ۔ حکومت نے جی او ایم ایس نمبر 1 کے ذریعہ ریاست میں تمام مذہبی و سیاسی اجتماعات پر 10 جنوری تک امتناع عائد کیا ہے ۔ اس کا اطلاق نمائش پر بھی کیا جا رہا ہے۔

 

بتایا گیا ہے کہ اتوار کی رات 10 بجے کے قریب پولیس کی جانب سے نمائش سوسائٹی کو نمائش بند کردیئے کے احکامات موصول ہوئے۔جس پر فوری اثر کے ساتھ منتظمین نے نمائش کے ٹکٹوں کے فروخت کو روک دیا اور نمائش دیکھنے آنے والے افراد کو اپنے اپنے گھروں کو چلے جانے کا لاوڈ اسپیکر پر اعلان کیا۔نمائش سوسائٹی اور حکومت کے اس اچانک اقدام سے عوام نے ناراضگی ظاہر کی۔اور بعض افراد نمائش سے جانے تیار نہیں تھے تاہم سوسائٹی کی جانب سے دکانوں کو بند کروا کر عوام کو باہر کردیا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button