تلنگانہ

اوٹکور میں جماعت اسلامی ہند و ایس آٸی او کا خطاب عام

*اوٹکور میں جماعت اسلامی ہند و ایس آٸی او کی جانب سے خطاب عام کا انعقاد*

اوٹکور: (محمد وسیم۔اردو لیکس) مستقر اوٹکور فیض الھدی گراٶنڈ پر جماعت اسلامی ہند اوٹکور و ایس آٸی او اوٹکور کی جانب سے ایک عظیم الشان عام خطاب عام میں صدارتی خطاب کرتے ہوٸے مولانا حامد محمد خان صاحب امیر حلقہ تلنگانہ نے ایک کثیر تعداد شرکت فرما حضرات سے کہا کہ مسلمانوں کے خلاف نفرت کی سیاست پھیلاٸی جارہی ہے یہ ایک منظم سازش ہے۔اب ہمارا کام ہے کہ مسلمان کو چاہٸے کہ حکمت و دانشمندی کا مظاہرہ کریں آج مسلمانوں کو چاہٸے کہ وہ اللہ اور رسول پر ایمان رکھتے ہوٸے اسلام کے آفاقی پیغام کو پہنچاٸیں۔ملک میں علاقاٸی اور نسلی تعصب ہے۔ملی ادارے مفاد پرستوں کے قبضہ میں ہیں۔قضاٸت کا نظام انحطاط کا شکار ہے۔ اوقافی جاٸیدادوں کو تباہ کیا جارہاہے خاندانی نظام کمزور ہوچکا ہے مسلکی اختلافات میں شدت عالمی طور پر عسکری طاقت کیلٸے دوسروں پر انحصار ہے۔ان قوتوں اور کمزوریوں کے ساتھ ساتھ امت مسلمہ کیلٸے کٸی امکانات اور مواقع بھی ہیں دعوت کے بے شمار مواقع امت کیلٸے موجود ہیں ملک میں ابوطالب صفت لوگوں کی بڑی تعداد ہے

 

سوشل میڈیا کا استعمال بہتر انداز میں کیا جاسکتا ہے مولانا نے معززین شہر اوٹکور سے اپیل کی وہ ان حالات میں اپنا تجزیہ کریں مستقبل کی منصوبہ بندی حکمت اور دانشمندی سے کریں اور برادران وطن سے بہترین تعلقات استوار کریں مولانا نے کہا کہ مسلمانوں کی ہمہ وقتی فرض منصبی ہے کہ وہ انسانوں کو براٸی سے روکے اور نیکی کی تلقین کرکے نار جہنم سے بچاٸیں۔مسلمانوں کو سب سے پہلے اپنے گھر اور خاندان کی اصلاح کے بعد معاشرہ کی اصلاح کیلٸے کمربستہ ہوناچاہٸے۔مولانا نے خواتین حضرات پر زور دیا کہ وہ اپنے اسلامی خطوط پر اپنے اولاد کی تربیت کریں گھریلو زندگی میں صحابیات رضی اللہ عنہا کے تذکرے ہوتے رہیں۔انٹر نیٹ اور بے حیاٸی جیسی براٸیوں سے دور رہتے ہوٸے قرآن و حدیث کی تعلیمات کو اپنانے کی طرف ماٸل ہوں تو یقینا ہمارا گھر جنت کا بہترین نمونہ بنتا ہے۔

صدارتی خطاب سے قبل ڈاکٹر طلحہ فیاض الدین صدر حلقہ ایس آٸی او تلنگانہ نے کہا کہ حضور ﷺ کی زندگی ہمارے لٸے بہترین نمونہ ہے۔آپ ﷺ کے کردار و اخلاق سے ہی ہم سب کو رہنماٸی حاصل ہوتی ہے۔حضور ﷺ کا طریقہ تربیت تھا کہ بت پرستی سورماٶں نے قبول اسلام کے بعد دنیا میں خداٸی قانون کے نفاذ اور اسلام کی سربلندی کیلٸے وہ کارہاٸے نمایاں انجام دٸیے جس کی مثال ملنا مشکل ہے۔برادر جاوید نے ترانہ پیش کیا۔حافظ عبدالقیوم صدر ایس آٸی او مقامی اوٹکور کے تلاوت کلام پاک اور ترجمہ سے اجلاس کا آغاز ہوا۔شہ نشین پر جناب عثمان عبیداللہ مجاہد صدیقی ناظم ضلع نے افتتاحی کلمات پیش کی۔اس موقع پر جناب عزیز شہنہ یادگیر،مقبول احمد،عبدالخالق کلوال،کاظم حسین،ابراہیم شاہ بھاٸی،منصور علی امیر مقامی اوٹکور،منہج الدین صاحب،احمد خان صاحب ناراٸن پیٹ،حافظ عبدالقیوم کے علاوہ دیگر موجود تھے۔ اختتامی خطاب کے بعد طلبا و نوجوانوں میں انعامات بھی تقسیم کئے گئے ایس آئی او کی جانب سے 25 روزہ صلات مہم میں شامل ہونے والے 80 طلبا کو انعامات سے نوازا گیا 25 طلبا جنہوں نے نماز فجر کی مہم میں پابندی کی اُن طلبا کو ایک تولہ چاندی نقد رقم دی گئی باقی تمام طلبا کو ترغیبی انعامات دیے گئے۔ اس کے علاوہ تحریری مقابلہ میں انعام اول انس الرحمان ولد فیض الرحمان درود نے حاصل کیا جن کو پانچ ہزار روپٸے کے انعام سے نوازا گیا۔ دوسرا مقام سمینہ بیگم ولد نظام الدین نے حاصل کیا جن کو تین ہزار روپئے اور تیسرا انعام فرحین بیگم ولد محمّد حنیف نے حاصل کیا جن کو پندره سو روپئے کے انعام سے نوازا گیا۔ اس کے علاوہ مقامی اسکول کے طلبا وہ طالبات کے لئے سیرتﷺ کوئز رکھا گیا تھا اس کے انعامات بھی تقسیم کٸے گئے۔ پروگرام میں محمد اقبال گنتہ،عبدالخالق،محمد سہیل،عبدالقیوم،محمد فاروق،جماعت اسلامی اوٹکور کے ارکان وہ کارکنان اور ایس آئی او کے ممبران اپلکینٹس موجود تھے۔ اجلاس کی کاررواٸی حافظ افتخار احمد صدر ضلع ناراٸن پیٹ ایس آٸی او نے چلاٸی۔تمام شرکا کیلٸے بعد اجلاس کے طعام کا انتظام کیا گیا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button