تلنگانہ

تلنگانہ میں زمینوں کی قیمتوں میں پھر اضافہ ہونے والا ہے

حیدرآباد_ 22 جنوری ( اردو لیکس) تلنگانہ میں زرعی اور غیرزرعی  اراضیات اور جائیدادوں کی مارکیٹ قیمتوں کے علاوہ رجسٹریشن چارجس میں پھر ایک مرتبہ اضافہ ہونے والا ہے

محکمہ اسٹامپ اینڈ رجسٹریشن کی جانب سے زمینوں کی مارکیٹ قیمتوں میں اضافہ کی تجویز کو حکومت نے منظوری دے دی۔اس سلسلہ میں چیف سکریٹری سومیش کمار نے احکامات جاری کرتے ہوئے محکمہ اسٹامپ اینڈ رجسٹریشن کو زمینوں کی مارکیٹ قیمتوں میں اضافہ کا جائزہ لینے کی اجازت دی ہے

6 مہینے قبل ہی ریاست میں زرعی اور غیر زرعی اراضیات اور جائیدادوں کی مارکیٹ قیمتوں اور رجسٹریشن کی شرحوں میں اضافہ ہوا تھا گزشتہ سال 22 جولائی کو حکومت نے زرعی اور غیر زرعی اراضی اور جائیدادوں کی قیمتوں اور رجسٹریشن فیس میں 50 فیصد تک اضافہ کیا تھا

اب 6 بعد ہی دوبارہ قیمتوں میں اضافہ کا فیصلہ کیا جارہا ہے سال 2013 کے بعد حکومت کی جانب سے اراضیات کی قیمتوں میں پہلی مرتبہ جولائی 2021 میں اضافہ کیاگیا تھا ۔جس سے  زرعی اور غیر زرعی اراضیات کے علاوہ پلاٹس اور فلاٹس کی مارکیٹ قیمتوں میں اضافہ ہوا تھا قیمتوں میں اضافہ سے متعلق تین سلاب بنائے گئے تھے  جن علاقوں میں اراضیات کی قیمت کم ہیں وہاں 50 فیصد کا اضافہ کیا گیا ہے اوسط قیمت والی اراضیات میں 40 فیصد اور زیادہ قیمت والی اراضیات کی قیمتوں میں 30 فیصد کا اضافہ کیا گیا ہے اور رجسٹریشن فیس میں7۔5 فیصد کا اضافہ کیا گیا تھا

اب دوسری مرتبہ قیمتوں میں اضافہ بھی 50 فیصد تک کرنے کا امکان ہے

متعلقہ خبریں

Back to top button